فشر مین کوآپریٹو سوسائٹی میں کروڑوں روپے کی کرپشن اور غیر قانونی بھرتیوں کے ریفرنس میں نثار مورائی سمیت چودہ ملزمان پرفرد جرم عائد

بدھ مئی 17:42

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) احتساب عدالت نے فشر مین کوآپریٹو سوسائٹی میں کروڑوں روپے کی کرپشن اور غیر قانونی بھرتیوں کے ریفرنس میں نثار مورائی سمیت چودہ ملزمان پرفرد جرم عائد کردی،،، ملزمان کے صحت جرم سے انکار پر عدالت نے 12 جون کو نیب کے گواہوں کو طلب کرلیا۔

(جاری ہے)

بدھ کو کراچی کی احتساب عدالت میں فشر مین کوآپریٹو سوسائٹی میں کروڑوں روپے کی کرپشن اورغیر قانونی بھرتیوں سے متعلق ریفرنس کی سماعت ہوئی عدالت میں سابق چیئرمین فشر مین کوآپریٹو سوسائٹی نثار مورائی سمیت دیگر عدالت میں پیش ہوئے عدالت میں نیب کے پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ ملزمان نے فشرمین کوآپریٹو سوسائٹی میں چار سو سے زائد غیر قانونی بھرتیاں کیں اور ملزمان نی34 کروڑ30لاکھ سے زائد کی کرپشن کی عدالت نی تمام ملزمان پر فرد جرم عائد کردی ملزمان کی جانب سے صحت جرم سے انکار کردیا گیا عدالت نے ملزمان کی جانب سے صحت جرم سے انکار پر بارہ جون تک نیب کے گواہان کو طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوئی کردی۔

متعلقہ عنوان :