لاہور ہائیکورٹ نے قانون دان عاصمہ حامد کی تعیناتی کالعدم قراردینے کے لئے دائر درخواست پر حکومت پنجاب کو نوٹس جاری

بدھ مئی 20:36

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) لاہور ہائیکورٹ نے قانون دان عاصمہ حامد کی تعیناتی کالعدم قراردینے کے لئے دائر درخواست پر حکومت پنجاب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔

(جاری ہے)

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس امین الدین خان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی، درخواست گزار بئیرسٹر سید محمد جاوید اقبال جعفری نے موقف اختیار کیا کہ عاصمہ حامد کو میرٹ کے برعکس جونیئر ہونے کے باوجود تعینات کیا گیا،انہوں نے کہا کہ عاصمہ حامد کی تعیناتی سیاسی بنیاد پر کی گئی ،آئینی عہدے پر تعیناتی کا کوئی طریقہ کار ہی موجود نہیں،انہوں نے استدعا کی کہ عاصمہ حامد کی تعیناتی کو میرٹ کے برعکس ہونے کی بناء پر کالعدم قرار دیا جائے، جس پر عدالت نے حکومت پنجاب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا، عدالت نے کیس کی مزید سماعت پانچ جون تک ملتوی کردی۔