بس ریپٹڈ ٹرانزٹ منصوبہ میں پونے تین کروڑ روپے مالیت کی فی بس خریدنے پرویز خٹک کیخلاف نیب تحقیقات کا مطالبہ

خیبر پختونخوا میں چائنا سے پونے تین کروڑ روپے مالیت کی فی بس خریدی گئی اور کرپشن کے تمام ریکارڈ توڑ ے گئے،الیاس بلور

بدھ مئی 19:47

بس ریپٹڈ ٹرانزٹ منصوبہ میں پونے تین کروڑ روپے مالیت کی فی بس خریدنے ..
پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنما اور ملک کے سینئر پارلیمنٹرین سینیٹر الیاس احمد بلور نے بس ریپٹڈ ٹرانزٹ منصوبہ میں پونے تین کروڑ روپے مالیت کی فی بس خریدنے پر سابق وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کیخلاف نیب تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ پنجاب میں کوریا سے ایک کروڑ روپے مالیت کی فی میٹرو بس خریدی گئی جبکہ خیبر پختونخوا میں چائنا سے پونے تین کروڑ روپے مالیت کی فی بس خریدی گئی اور کرپشن کے تمام ریکارڈ توڑ ے گئے ۔

ایک بیان میں ملک کے سینئر پارلیمنٹرین اور ممتاز صنعتکار سینیٹر الیاس احمد بلور نے کہاکہ نیب بس ریپٹڈ ٹرانزٹ منصوبے میں ہونیوالی کرپشن اور بے قاعدگیوں کی غیر جانبدار تحقیقات کرے خاص طور پر بسوں کی خریداری میں ہونیوالی غضب کی کرپشن عوام کے سامنے لائی جائے تاکہ اُنہیں معلوم ہوسکے کہ اس صوبے میں کرپشن کرنیوالوں نے تبدیلی کے نام پر عوام کو کس طرح لوٹا اور کرپشن کے بازار گرم کئے ۔

(جاری ہے)

سینیٹر الیاس احمد بلور نے کہا کہ اگر نیب نے بی آر ٹی منصوبے میں ہونیوالی کرپشن کی غیر جانبدار تحقیقات نہ کیں اوراس منصوبے میں کمشن کی صورت میں ہڑپ کی گئی رقم کی ریکوری نہ کی تو عوام کا اس ادارہ سے اعتماد اٹھ جائے گا اور یہ واضح ہوجائے گا کہ نیب جانبداری کا مظاہرہ کر رہا ہے ۔