ہیٹ اسٹروک کے مریض نہیں لائے گئے،ڈاکٹر سیمی جمالی

موسمی حالات اور بڑھتی ہوئی لو کا تقاضہ ہے کہ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی بھی دیکھے کہ عمارتیں کہاں اور کیسی بنائی جائیں ، ڈائریکٹرجناح اسپتال

بدھ مئی 19:47

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) جناح اسپتال کراچی کی ڈائریکٹر ڈاکٹر سیمی جمالی نے کہاہے کہ رواں برس ہیٹ اسٹروک(لو)کے مریض نہیں لائے گئی.انہوں نے تسلیم کیا کہ لو سے بزرگ، بچے اورمریض جلد متاثرہوسکتے ہیں،لو کی روک تھام کے لیے شہر میں زیادہ سے زیادہ درخت لگائے جائیں۔خصوصی بات چیت کرتے ہوئے ڈاکٹر سیمی جمالی نے کہا کہ موسمی حالات اور بڑھتی ہوئی لو کا تقاضہ ہے کہ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی بھی دیکھے کہ عمارتیں کہاں اور کیسی بنائی جائیں انہوں نے کہاکہ اسکولوں میں گرمی کی تعطیلات قبل از وقت دینا اچھا اقدام ہے، بچے محفوظ رہتے ہیں۔

ڈاکٹرسیمی جمالی نے لو سے آگاہی اور بچائو کی تدابیر کو عوام تک پہنچانے کے حوالے سے ذرائع ابلاغ کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ میڈیا نے 2015 کے مقابلے میں اس بار بڑی بھرپور اورموثر آگاہی مہم چلائی۔

(جاری ہے)

ڈائریکٹر جنرل ماحولیات عرفان طارق نے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ کرہ ارض کا درجہ حرارت بڑھ رہا ہے جس میں پاکستان کا کردار بہت کم ہے۔

ڈی جی ماحولیات نے بتایا کہ گلوبل وارمنگ کی وجہ ترقی یافتہ ممالک میں صنعت کاری ہے جس سے پاکستان بہت زیادہ متاثر ہو رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ گلوبل وارمنگ کی وجہ سے لو بڑھتی جا رہی ہے ایسی صورتحال میں لباس کا خیال رکھیں اور پانی کا زیادہ استعمال ضروری ہے۔عرفان طارق نے کہا کہ لو سے بچنے کیلیے بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کو بھی کردار ادا کرنا چاہیے۔