کراچی کو امن کا گہوارہ بنانے کے لئے ضروری ہے پاسبان کے مطالبے پر کراچی کو میگا سٹی کا آئینی درجہ دینے کا حق بلا تاخیر دیا جائے،مشترکہ بیان

بدھ مئی 20:20

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) پاسبان پاکستان کے سینئر نائب صدر رفیق احمد خاصخیلی اور پاسبان کراچی کے صدر عبدالحاکم قائد نے کہا ہے کہ کراچی کو جرائم پیشہ عناصر سے پاک کرنے اور عوام کو بنیادی حقوق و سہولتیں بلا تعطل فراہم کرکے کراچی کو امن کا گہوارہ بنانے کے لئے ضروری ہے کہ پاسبان کے مطالبے پر کراچی کو میگا سٹی کا آئینی درجہ دینے کا حق بلا تاخیر دیا جائے ۔

آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ کی جانب اس بات کی نشاندہی کہ ملک بھر سے جرائم پیسہ عناصر کراچی آتے ہیں اور کراچی میں چار بڑے آپریشنز کے باوجود ہر جگہ چھوٹی چھوٹی مافیاز موجود ہیں انتہائی بروقت کی گئی ہے ۔۔کراچی کو لاہور کی طرز پر سیف سٹی نظام کی فراہمی بھی وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ پاسبان پریس انفارمیشن سیل سے جاری کردہ بیان میں پاسبان رہنمائوں نے کہا کہ پاسبان نے کراچی کو میگا سٹی کا درجہ دینے کے لئے جو جدوجہد شروع کر رکھی ہے، اس جدوجہد میں پورے کراچی کی عوام شامل ہیں ۔

(جاری ہے)

کراچی کو سندھ یا ملک سے الگ نہیں کیا جاسکتا بلکہ کراچی جب میگا سٹی بنے گا تو سب سے پہلے سندھ کے گوٹھوں اوردیہاتوں کے عوام کو بھی ان کا حق ملے گا، ان کی معاشی حالت بہتر ہوجائے گی ،انہیں وڈیروں کے ظلم سے نجات ملے گی اور پھر پورے ملک میں بھی حقیقی معنوں میں خوشحالی نظر آئے گی ۔ پاسبان رہنمائوں نے کہا کہ پاکستان بننے کے بعد عوام کے ووٹوں سے اقتدار حاصل کرنے والے حکمران مالدار بن گئے اور عوام کو انہوں نے اپنی کرپشن اور لوٹ کھسوٹ کے ذریعے بد حال بنادیا ۔ پاسبان کراچی کو میگا سٹی کا درجہ دلاکر ملک میں حقیقی تبدیلی لانا چاہتی ہے اور کراچی کو میگا سٹی بناکر جرائم کو ختم کیا جاسکتا ہے کیونکہ جب عوام خوشحال ہونگے تو جرائم خود بخود ختم ہوںگے۔