سرگودھا ،میونسپل کارپوریشن کی واٹر سپلائی سکیموں اور مرمتی کاموں میں سنگین نوعیت کی مالی بد عنوانیاں ، چھان بین سیاسی مداخلت کی نذر

ادارے کو مالی ابتر ی سے دوچار کرنے کایہ سلسلہ بھی بدستور جاری چیف منسٹر پٹیشن سیل نے بوگس کاموں اور اس مد میں ہونیوالی بے ضابطگیوں کے شواہد ہونے پر بلدیاتی ادارے کے سربراہ کو اصلاح و حوال کے ساتھ ساتھ ذمہ داروں کے خلاف سخت ایکشن لینے کی ہدایت کی تھی

بدھ مئی 20:25

سرگودھا (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) میونسپل کارپوریشن کے تحت واٹر سپلائی سکیموں اور ڈسپوزل ورکس کے مرمتی کاموں میں سنگین نوعیت کی مالی بد عنوانیوں کی چھان بین سیاسی مداخلت کی نذر ہو کر ٹھپ ہو گئی جبکہ ادارے کو مالی ابتر ی سے دوچار کرنے کایہ سلسلہ بھی بدستور جاری ہے ،چیف منسٹر پٹیشن سیل نے بوگس کاموں اور اس مد میں ہونیوالی بے ضابطگیوں کے شواہد ہونے پر بلدیاتی ادارے کے سربراہ کو اصلاح و حوال کے ساتھ ساتھ ذمہ داروں کے خلاف سخت ایکشن لینے کی ہدایت کی تھی، مگر چند ایک ملازمین کے تبادلے کر کے معاملات دبا دیئے گئے جبکہ ذرائع کے مطابق مختلف مواقع پر ایمرجنسی کی آڑ میں نہ صرف قوائد و ضوابط کی دھجیاں بکھیرتے ہوئے گھوسٹ کاموں کے مبینہ بل پاس کروائے جارہے ہیں بلکہ من پسند ٹھیکیداروں سے ساز باز کر کے ان کاموں کے کئی کئی گنا اضافی تخمینے لگا کر ماہانہ لاکھوں روپے کا محکمے کو ٹیکہ لگایاجا رہا ہے ،یہ بات بھی سامنے آئی کہ ذمہ دار سیٹوں پر ایسے ملازمین تعینات کئے گئے ہیں جو پہلے ہی مبینہ کرپشن کے کیسز یا انکوائریوں کی زد میں ہیں،اور چیک اینڈ بیلنس کے فقدان کی وجہ سے کوئی پوچھنے والا نہیں،یہی نہیں تحقیقات کی ہدایت پر جواب تک گوارہ نہیں کیا گیا جس پر ضلعی ایڈمنسٹریشن کو معاملات کی چھان بین اور ذمہ داروں کے خلاف سخت کاروائی کی ہدایت کی ہے ۔

متعلقہ عنوان :