اسلام آباد ہائیکورٹ نے مزید 4 اضلاع کی حلقہ بندیاں کالعدم قرار دے دیں

اسلام آباد ہائیکورٹ اٹک اور ایبٹ آباد کی حلقہ بندیوں سمیت 31 مزید درخواستوں کی سماعت (کل) کریگی

بدھ مئی 20:48

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) اسلام آباد ہائیکورٹ نے مزید 4 اضلاع کی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دے دیا۔عدالت نے گزشتہ روز بھی حلقہ بندیوں سے متعلق متفرق درخواستوں پر فیصلہ سناتے ہوئے 4 اضلاع کی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دیا تھا جن میں جہلم، ٹوبہ ٹیک سنگھ، جھنگ اور لوئر دیر کی حلقہ بندیاں شامل ہیں۔

(جاری ہے)

بدھ کو اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے مزید 13 اضلاع کی حلقہ بندیوں پر فیصلہ سنا دیا ہے جن میں عدالت نے ضلع خاران، گھوٹکی، قصور اور شیخوپورہ کی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دیا گیا ۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے 9 اضلاع کی حلقہ بندیوں کے خلاف دائر درخواستیں مسترد کردیں جن میں خانیوال، چنیوٹ، کرم ایجنسی، راجن پور، مانسہرہ، صوابی، جیکب آباد، گوجرانوالہ اور عمر کوٹ کی حلقہ بندیوں کے خلاف درخواستیں مسترد کی گئی ہیں ،ْاس کے علاوہ عدالت نے ہری پور، سیالکوٹ، بہاولپور، رحیم یار خان، بنوں اور چکوال کی حلقہ بندیوں پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔اسلام آباد ہائیکورٹ اٹک اور ایبٹ آباد کی حلقہ بندیوں سمیت 31 مزید درخواستوں کی سماعت جمعرات کو کرے گی۔