رہنماء تحریک انصاف ڈاکٹر دولتمند کا شانگلہ کے مختلف محکموں میں ہونیوالی بھرتیوں میں مبینہ تاخیر پر شدید احتجاج

بدھ مئی 21:14

ا لپوری(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) شانگلہ میں تحریک انصاف کے ضلعی رہنماء ڈاکٹر دولتمند نے شانگلہ مختلف محکموں میں ہونے والے بھرتیوں میں مبینہ تاخیر پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ حال ہی میں شانگلہ کے مختلف محکموں جس میں تعلیم ، صحت ، بلدیات ، انتظامیہ اور دیگر محکموں میں امیدواران سے انٹرویوز اورامتحانات لئے گئے تاہم بھرتی ارڈر التواء کا شکار ہے جس کی وجہ سے امیدواران میں سخت بے چھینی کا لہرپھیل گیا ہے ، صوبائی حکومت صورتحال پر نوٹس لیکر امیدواران کی تحفظات دور کریں ۔

ان خیالات کا اظہار پی ٹی ائی کے سینئر رہنماء ڈاکٹر دولتمند نے بدھ کے روز الپوری میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔ انھوں نے کہا کہ شانگلہ میں مختلف محکموں میں امتحانات اور انٹرویوز ہونے کے باوجود تعیناتی حکم التواء کا شکار ہے،شانگلہ ایک غریب اورپسماندہ ضلع ہے ، مختلف محکموں کے ضلعی افسران خالی اسامیوں پر انٹرویو اور امتحانات ہونے کے باوجود ارڈرز نہ جاری کرنا ہمارے ساتھ امتیازی سلوک ہے، ضلعی افسران اپنے روئے عوام کیلئے تبدیل کریں ، محکمہ بلدیات کے چہارم ، محکمہ ہیلتھ کے لیڈی ہیلتھ ورکرز ، محکمہ تعلیم میں این ٹی ایس کے ذریعے اساتذہ ، ڈی سی آفس میں کلرکس اور کلاس فور کے ٹیسٹ اور انٹرویو ہونے کے باوجود ان کے ارڈرز التواء کا شکار ہیں جو کہ ہرگز قبول نہیں، شانگلہ کے ساتھ جاری امتیازی سلوک پر مایوس ہیں ، ضلعی افسران شانگلہ فی الفور میرٹ کے بنیاد پر تمام پنڈنگ پوسٹس پر تعیناتی عمل میں لائیں۔

(جاری ہے)

انھوں نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ متعلقہ محکموں کے سربراہان کو حکم جاری کریں کہ وہ بھرتیوں کے عمل میں تیزی پیدا کرکے خالی اسامیاں جلد از جلد پر کریں۔