ایم کیو ایم پاکستان کے ارکان کا مردم شماری کی5 فیصد آڈٹ سے متعلق وعدے کی عدم تکمیل پر ایوان سے واک آئوٹ

بدھ مئی 21:30

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) قومی اسمبلی میں ایم کیو ایم پاکستان کے ارکان نے مردم شماری کے پانچ فیصد آڈٹ سے متعلق وعدے کی عدم تکمیل پر ایوان سے علامتی واک آئوٹ کیا۔ بدھ کو قومی اسمبلی میں نکتہ اعتراض پر ایم کیو ایم کے شیخ صلاح الدین نے کہا کہ پرائیویٹ ممبر ڈے بالخصوص اپوزیشن کے اراکین کے لئے ہوتا ہے اس کے باوجود کل تحریک انصاف کی جانب سے کورم کی نشاندہی ہوئی ہے۔

ایسا نہیں ہونا چاہیے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ رئوف صدیقی نے سیرت النبیؐ پر ایک کتاب لکھی ہے اور میں اس حوالے سے قرارداد پیش کرنا چاہتا ہوں۔ سپیکر نے کہا کہ انہوں نے صوبوں سے کہا ہے کہ اس کتاب کو لائبریریوں میں شامل کیا جائے۔ شیخ صلاح الدین نے کہا کہ مردم شماری میں سندھ کی شہری آبادی کو کم ظاہر کیا گیا ہے۔ آڈٹ ویری فیکیشن کے حوالے سے وعدوں پر عملدرآمد کیا جائے۔ شیخ صلاح الدین نے کہا کہ ہم اس ضمن میں علامتی واک آئوٹ کریں گے اور اس کے ساتھ ہی ایم کیو ایم ایوان سے باہر چلی گئی۔ سپیکر نے شیخ آفتاب سے کہا کہ وہ ایم کیو ایم کے ارکان کو منا کر لائیں۔