فیصل آباد،ڈویژنل زرعی مشاورتی کمیٹی کا اجلاس

بدھ مئی 21:46

فیصل آباد ۔30 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) ڈویژنل زرعی مشاورتی کمیٹی کا اجلاس ڈویژنل کمشنر مومن آغا کی ہدایت پر کمشنر آفس کے کمیٹی روم میںمنعقد ہوا جس کی صدارت ایڈیشنل کمشنر کوآرڈینیشن مہر شفقت اللہ مشتاق نے کی۔اجلاس کے دوران ڈائریکٹر زراعت چوہدری عبدالحمید نے کپاس کی فصل کی بوائی کی صورتحال سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ ڈویژن بھر میں 81.4فیصد ہدف حاصل کرلیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ دیہاتوں کی سطح پر کاشتکاروں کی تربیت کے لئے 49ٹیمیں کام کررہی ہیں اور رواں سال 1312گائوں میں جاکر 23ہزار817کاشتکاروں کو محکمہ کے اقدامات کے بارے میں آگاہی کے علاوہ 6ہزار 702لٹریچر بھی مفت تقسیم کیا گیا ہے۔ڈائریکٹر زراعت نے بتایا کہ زرعی زمینوں کے تجزیہ کے سلسلے میں 90ہزار369سمپلز حاصل کرکے 76 ہزار 602نمونے لیبارٹری ارسال کئے جاچکے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے بتایا کہ ای کریڈٹ سکیم کے تحت چاروں اضلاع میں 14ہزار 884کاشتکاروں کی رجسٹریشن اور کسان کارڈ کے لئے ایک لاکھ 22ہزار664موصولہ درخواستوں میں سے 80ہزار47درخواستیں ڈیش بورڈ پررجسٹریشن ہوچکی ہے ۔چاروں اضلاع میں جعلی وملاوٹی کیڑے مارادویات فروخت کرنے والوں کے خلاف سمپلز ان فٹ آنے پررواں سال اب تک 12مقدمات جبکہ جعلی کھادیں فروخت کرنے کی پاداش میں 9ڈیلرز کے خلاف مقدمات درج کرائے گئے۔ایڈیشنل کمشنر کوآرڈینیشن نے کہا کہ حکومت پنجاب کے کسانوں کیلئے کئے جانے والے اقدامات کو صحیح معنوں میں ان تک پہنچانے میں کوئی کسر باقی نہیں رہنی چاہیے۔انہوںنے ہدایت کی کہ کسانوں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل ہونے چاہیں۔ اس سلسلے میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہ کیا جائے۔

متعلقہ عنوان :