ایم کیو ایم نئی حلقہ بندیوں کو نہیں مانتی ،فیصل سبزواری

کراچی کی آبادی کسی صورت ڈھائی کروڑ سے کم نہیں ،مردم شماری پر عدالتی فیصلے تک الیکشن نہ کرائے جائیں، میڈیا سے گفتگو

بدھ مئی 21:50

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے رہنما فیصل سبزواری نے کہا ہے کہ ہماری جماعت نئی حلقہ بندیوں کو نہیں مانتی ،،کراچی کی آبادی کسی صورت ڈھائی کروڑ سے کم نہیں ،،مردم شماری پر عدالتی فیصلے تک الیکشن نہ کرائے جائیں۔بدھ کوایم کیو ایم کے وفد نے الیکشن کمیشن سے ملاقات کی۔بعدازاں عامر خان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فیصل سبزواری نے کہا کہ کراچی میں یونین کونسل بڑی ہے توصوبائی اسمبلی کاحلقہ چھوٹاکردیاگیا۔

انہوں نے کہاکہ مردم شماری کوشفاف بنائے بغیرالیکشن شفاف نہیں ہوسکتے،ملک بھرسے مردم شماری پراعتراضات آرہے ہیں،،قومی اسمبلی کی سفارشات کوبھی ردکردیاگیا،،الیکشن کاشیڈول جاری کرنے سے پہلے مردم شماری کا ازسرنو جائزہ لیا جائے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہاکہ ایم کیوایم نے الیکشن کمیشن میں درخواست کی ہے کہ جب تک مردم شماری کے اصل نتائج سامنے نہیں آتے حلقہ بندی نہ کی جائے، اگر درخواست نہ مانی گئی تو عدالت میں جائیں گے۔

فیصل سبزواری نے کہاکہ مشترکہ مفادات کونسل نے طے کیا تھا کہ مردم شماری کے نتائج کا اعلان اس وقت تک نہیں ہوگا جب تک 5 فیصد رہائشی بلاک کا تھرڈ پارٹی آڈٹ نہ ہو ۔انہوں نے کہاکہ شفاف انتخابات کرانا الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے جبکہ مردم شماری میں حلقہ بندی قابل اعتراض ہے اورانتخابات جس مردم شماری کی بنیاد پر ہوںگے وہ بھی قابل اعتراض ہی ہوںگے۔انہوں نے کہاکہ اسلام آباد میں حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دیدیا لیکن یہاں ایسی ایسی یونین کونسلز بنی ہیں کہ ان کے حوالے سے کچھ نہیں کہا جاسکتا، پتنگ کا نشان ایم کیو ایم پاکستان کے پاس ہے پارٹی کا سربراہ کون ہوگا عدالت نے فیصلہ محفوظ کر رکھا ہے جو جلد سب کو معلوم ہوجائے گا۔