آواز نیچی رکھیں،احسن اقبال کو بھری عدالت میں جھاڑ پلا دی گئی

مدہم آواز میں بات کریں ، آواز اونچی نہ کریں ، عدالت کے ریمارکس

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس بدھ مئی 22:33

آواز نیچی رکھیں،احسن اقبال کو بھری عدالت میں جھاڑ پلا دی گئی
لاہور (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار-30مئی 2018ء) :آواز نیچی رکھیں،،احسن اقبال کو بھری عدالت میں جھاڑ پلا دی گئی۔لاہورہائی کورٹ نے توہین عدالت کیس کی سماعت کے دوران وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کو کہا گیا کہ وہ اپنی آواز کو مدہم رکھیں اوراونچی آوازمیں بات نہ کریں۔تفصیلات کے مطابق جسٹس مظاہرعلی اکبر نقوی کی سربراہی میں لاہور ہائی کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے وفاقی وزیر احسن اقبال کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی۔

عدالت میں احسن اقباک کو بولنے کا موقع دیا گیا تووزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ معزرت چاہتا ہوں کہ گزشتہ پیشی پر پیش نہیں ہوسکا، ایک جنونی شخص نے مجھ پر حملہ کیا اور زخمی ہوگیا، میں زندگی کی بچنے پر اللہ کا شکر ادا کرنے عمرہ کی ادائیگی کے لیے گیا تھا، میں سیاسی کارکن ہوں اور قانون و جمہوریت پریقین رکھتا ہوں، چیف جسٹس پاکستان سب کے چیف جسٹس ہیں، میں نے آج تک ایسا کچھ نہیں کہا جس سے عدلیہ کے وقارکو ٹھیس پہنچے، میرے مخالفین نے میرے خلاف سازش کی کہ میں وائس چانسلر لگواتا ہوں. فاضل جج صاحبان نے ریمارکس دیئے کہ اپنی آوازمدہم رکھیں اونچی آواز میں بات نہ کریں، آئین کے آرٹیکل 68 کے تحت کسی بھی پبلک آفس ہولڈرکے خلاف بات نہیں ہوسکتی، آپ اور آپ کے لیڈر نے جو کیا اس پر قصور والا واقعہ ہوا، بحیثیت وفاقی وزیرآپ نے اس واقعہ کے بارے کیا حکم دیا۔

(جاری ہے)

عدالت نے احسن اقبال سے تحریری جواب طلب کرتے ہوئے سماعت پانچ جون تک ملتوی کردی۔