نگران وزیراعلیٰ پنجاب کا نام واپس لیکر پی ٹی آئی نے ایک مرتبہ پھر یو ٹرن لیا ہے‘ سینیٹر لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقیوم

جمعرات مئی 00:40

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقیوم نے کہا ہے کہ نگران وزیراعلیٰ پنجاب کا نام واپس لیکر پی ٹی آئی نے ایک مرتبہ پھر یو ٹرن لیا ہے۔ بدھ کو ایک نجی ٹی وی چینل سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کا یہ فیصلہ ظاہر کرتا ہے کہ ان کی قیادت میں فیصلے کی طاقت کا فقدان ہے جبکہ انہیں خود پر بھی اعتماد نہیں۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی نے خیبرپختونخوا اور صوبہ پنجاب میں اتفاق رائے سے نگران وزرائے اعلیٰ کے ناموں کا اعلان کیا لیکن بعد میں اپنا ہی یہ فیصلہ واپس لے لیا جو ان کی سیاسی ناپختگی کو واضح کرتا ہے۔ سینیٹر عبدالقیوم کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی ایک طرف تو منتخب ہونے کی صورت میں ملک چلانے کا ایجنڈا پیش کرتی ہے لیکن دوسری طرف اس کی قیادت نگران وزیراعلیٰ کے لیے کوئی فیصلہ نہیں کر سکی۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف مختلف معاملات پر غیرمعمولی سیاست کا مظاہرہ کر رہی ہے اور نگران وزیراعلیٰ کی تقرری کے حالیہ واقعے کے بعد عوام پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ جانے سے گریز کریں گے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے مسلح افواج کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ہماری مسلح افواج ملکی سرحدوں کی حفاظت سمیت دہشت گردی کے خلاف جنگ اور دیگر کئی محاذوں پر لڑ رہی ہیں اور لازوال قربانیاں پیش کر رہی ہیں۔