غزہ، راکٹ اور فضائی حملوں کے بعد حماس اور اسرائیل میں جنگ بندی پر اتفاق

جمعرات مئی 11:10

غزہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) فلسطین کے علاقے غزہ کی حکمران جماعت حماس نے اعلان کیا ہے کہ اس نے اور اسرائیل نے حالیہ جھڑپوں کے بعد لڑائی بند کرنے پر اتفاق کرلیا ہے۔امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق حماس کے سینئر سربراہ خلیل الحیة نے صحافیوں کو بتایا ہے کہ جنگ بندی پر اتفاقِ رائے مصر کی مداخلت اور اس کی کوششوں سے ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ حماس اس وقت تک جنگ بندی پر عمل کرے گی جب تک اسرائیل بھی اس پر عمل کرتا رہے گا۔

(جاری ہے)

اسرائیلی حکومت کے ایک وزیرآریے دیری نے ایک مقامی ریڈیو سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں امید ہے کہ صورتِ حال جلد معمول پر آجائے گی۔انہوں نے کہا کہ اسرائیل نے حماس کو صورتِ حال معمول پر لانے کا ایک موقع دیا ہے تاہماگر اس نے اس کا مثبت جواب نہ دیا تو اسے ایک انتہائی تکلیف دہ حملے کا سامنا کرنا پڑے گا۔فریقین کے درمیان جنگ بندی ایسے وقت طے پائی ہے جب ایک روز قبل ہی اسرائیل نے راکٹ حملوں کے جواب میں غزہ میں درجنوں مقامات پر بمباری کی تھی۔

متعلقہ عنوان :