حوثی باغی الحدیدہ میں بیلسٹک میزائل اور دیگراسلحہ چھوڑ کر فرار،فوج نے قبضہ کرلیا

اسلحہ میں بیلسٹک میزائل اور بحری جہازوں کو نشانہ بنانے والے میزائل بھی شامل ہیں،یمنی فوج کا بیان

جمعرات مئی 12:18

صنعائ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) یمن کے مغربی ساحلی شہر الحدیدہ میں باغیوں کے خلاف آپریشن کے دوران یمنی فوج نے مال غنیمت میں بھاری اسلحہ اور گولہ بارود حاصل کیا ہے۔عرب ٹی وی کے مطابق یمن کی سرکاری فوج نے گزشتہ روز جاری کیے گئے اپنے ایک بیان میں کہاکہ ایران نواز حوثی شدت پسند الدریھمی ڈاریکٹوریٹ سے پسپائی کے بعد اسلحہ اور گولہ بارود چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

الدریھمی کے مقام سے ملنے اسلحہ میں بیلسٹک میزائل اور بحری جہازوں کو نشانہ بنانے والے میزائل بھی شامل ہیں۔یمنی فوج کی طرف سے باغیوں کے قبضے سے حاصل کردہ اسلحہ کی ایک فوٹیج جاری کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ باغی اس اسلحہ کو جہاز رانی میں رکاوٹ ڈلنے اور بحری جہازوں پر حملوں کے لیے استعمال کرنا چاہتے تھے۔

(جاری ہے)

فرار ہونے والے باغیوں کے قبضے سے دو بیلسٹک میزائل بھی ملے ہیں جنہیں مبینہ طورپر سرکاری فوج،، حکومتی مراکز یا سعودی عرب پر حملوں کے لیے استعمال کیا جانا تھا۔

خیال رہے کہ حوثی باغی الدریھمی سے بحر احمر میں بحری جہازوں اور المخا اور الخوخہ کے علاقوں میں حکومتی تنصیبات پرحملے کرتے رہے ہیں۔الدریھمی جو کہ الحدیدہ شہر سے 18 کلو میٹر کی مسافت پر ہے کی فوٹیج میں باغیوں کی شکست اور ان کے فرار کے مناظر بھی دکھائے گئے ہیں۔ یہ اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ سرکاری فوج اور عرب اتحادی فوج تیزی کے ساتھ الحدیدہ شہر کے مرکز کی طرف بڑھ رہی ہیں۔