پاکستان کھجور کی پیداوار کے لحاظ سے دنیا بھر میں پانچویں نمبر پر آگیا

جمعرات مئی 14:55

فیصل آباد۔31 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) جدید پیداواری ٹیکنالوجی کے باعث پاکستان دنیا بھر میں کھجور پیداکرنے والے ممالک کی فہرست میں پانچویں نمبر پر آ گیا ہے، ملک میںہر سال 9لاکھ ٹن سے لیکر ساڑھے 10 لاکھ ٹن تک کھجوروں کی پیداوار حاصل ہو تی ہے جس میں سے کھجور کی برآمد کے ذریعے بھاری زر مبادلہ بھی کمایا جا رہا ہے۔

(جاری ہے)

ماہرین زراعت کا کہنا ہیکہ اگر کھجوروںکو خشک کرنے کیلئے پیداواری علاقوں میں سولر ڈرائر نصب کر دیئے جائیں تو اس کے مزید بہتر نتائج حاصل ہوسکتے ہیں کیونکہ سولر ڈرائر 72گھنٹو ں کے ریکارڈ وقت میں ڈیڑھ ٹن اور ایک ماہ میں کم از کم 15ٹن کھجوریں خشک کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے، جس سے کھجورو ں کی لذت ، معیار اور صلاحیت کو مزید بڑھایا جا سکتاہے۔

انہوںنے بتایاکہ سولر ڈرائرز کی تنصیب کیلئے حکومت کو کھجور پیدا کرنے والوں کی معاونت کر نی چاہئے جس پر تقریباً 4لاکھ روپے لاگت آتی ہے۔ انہوںنے بتایا کہ سولر ڈرائرز کی خصوصیت یہ ہے کہ یہ بہت سادہ ٹیکنالوجی کے حامل ہیں جو سورج کی روشنی استعمال کرتے ہیں، ان کیلئے مہنگے سولر پینلز اور بجلی کی بھی کوئی ضرورت نہیں ہوتی ہے جس کے باعث ان کے اخراجات نہ ہونے کے برابر ہیں۔