انڈونیشیا میں قید پاکستانی ذوالفقار علی جکارتہ کے ہسپتال میں انتقال کر گئے

جمعرات مئی 20:49

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) انڈونیشیا میں قید پاکستانی زوالفقار علی گزشتہ روز جکارتہ کے ایک ہسپتال میں انتقال کر گئے۔جمعرات کو دفتر خارجہ کے مطابق جکارتہ میں پاکستانی سفارتخانہ میت پاکستان لانے کیلئے مرحوم کے لواحقین کیساتھ مکمل تعاون کررہا ہے۔ذوالفقار علی کو 2004میں منشیات کے الزام میں انڈونیشین پولیس نے گرفتار کیا۔

2005میں ماتحت عدالت نے موت کی ساز سنا دی جبکہ 2008 میں انڈونیشیا کی سپریم کورٹ نے سزا کیخلاف انکی اپیل مسترد کر دی۔

(جاری ہے)

2016 زوالفقار کو جگر کے کینسر کی تشخیص ہوئی ۔اس تمام عرصہ میں جکارتہ میں پاکستانی سفارتخانہ انہیں قانونی اور مالی امداد فراہم کرتا رہا ہے۔حکومت پاکستان نے ذوالفقار کی ملک واپسی کیلئے سنجیدگی سے کوششیں کیں۔۔صدر مملکت اور وزیر اعظم پاکستان نے رواں سال جنوری میں انڈونیشیا کے صدر کے دورہ پاکستان کے موقع پر انکی معافی اور ملک واپسی کا معاملہ اٹھایا۔معاملہ انڈونیشین سپریم کورٹ میں زیر التوا تھا۔ ترجمان نے کہا کہ جکارتہ میں پاکستانی سفارتخانہ میت کی ملک واپسی کیلئے مرحوم کے لواحقین کیساتھ مکمل تعاون کر رہا ہے۔