منتخب حکومت اپنی آئینی مدت پوری کر چکی ، لیکن عوام سے کیے وعدے پورے کرنے میں ناکام رہی ، سراج الحق

سیاستدان اپنے اختیارات استعمال نہیں کریں گے تو پھر کوئی اور استعمال کرے گا،پاکستان کے اندر جمہوریت ابھی تک کمزور اور عوام کو ڈیلیور کرنے میں ناکام رہی، امید ہے انگران وزیر اعظم کی نگرانی میں ملک کے اندر شفاف اور غیر جانبدار انتخابات ہوں گے، سربراہ جماعت اسلامی کی پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا سے گفتگو

جمعرات مئی 22:47

منتخب حکومت اپنی آئینی مدت پوری کر چکی ، لیکن عوام سے کیے وعدے پورے ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) جماعت اسلامی کے سربراہ سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ منتخب حکومت اپنی آئینی مدت پوری کر چکی ، لیکن حکومت عوام سے کیے گئے وعدے پورے کرنے میں ناکام رہی ہے اگر سیاستدان اپنے اختیارات استعمال نہیں کریں گے تو پھر کوئی اوران کو استعمال کرے گا،،پاکستان کے اندر جمہوریت ابھی تک کمزور اور عوام کو ڈیلیور کرنے میں ناکام رہی، امید ہے انگران وزیر اعظم کی نگرانی میں ملک کے اندر شفاف اور غیر جانبدار انتخابات ہوں گے۔

وہ جمعرات کو پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ انہوںنے کہا کہ خوش آئند بات ہے کہ منتخب حکومت اپنی آئینی مدت پوری کر رہی ہے، لیکن حکومت عوام سے کیے گئے وعدے پورے کرنے میں ناکام رہی ہے۔

(جاری ہے)

پاکستان کے اندر جمہوریت ابھی تک کمزور ہے جو عوام کو ڈیلیور کرنے میں ناکام رہی۔ پاکستان میں جمہوریت ہر وقت خطرے میں رہتی ہے، میری دعا ہے کہ جمہوریت مضبوط ہو جائے تاکہ اس کو لاحق خطرات کم ہوں ۔

نگران حکومتوں پر صوبوں میں اتفاق نہہونا ایک سنجیدہ مسئلہ ہے جس پر سیاستدانوں کو سنجیدگی کے ساتھ سوچنا ہوگا۔ اگر سیاستدان اپنے اختیارات استعمال نہیں کریں گے تو پھر ان کو کوئی اور آکران کو استعمال کرے گا۔ خوشی اس بات کی ہے کہ وفاق میں سنجیدگی کے باعث نگران وزہر اعظم کے نام پر اتفاق ہو گیا اور ناصر الملک ایک اچھے کردار کے انسان ہیں جو سب کو قابل قبول ہیں۔ امید ہے ان کی نگرانی میں ملک کے اندر شفاف اور غیر جانبدار انتخابات ہوں گی