ڈاکٹر ضیاء الحق کو پروفیسر آف پبلک ہیلتھ کے عہدے ترقی دیدی گئی ، اس عہدے پر تعینات کم عمر ترین ڈاکٹر کا اعزاز بھی حاصل کرلیا

جمعرات مئی 22:50

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) خیبر میڈیکل یونیورسٹی(کے ایم یو) پشاور کے انسٹی ٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ اینڈ سو شل سائنسز (آئی پی ایچ اینڈ ایس ایس) کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ضیاء الحق کو پروفیسر آف پبلک ہیلتھ کے عہدے پر تعینات کردیا گیا۔واضح رہے کہ ڈاکٹر ضیاء الحق صوبے کے پہلے ڈاکٹر ہیں جنہیں پروفیسر آف پبلک ہیلتھ کے عہدے پر تعینات کیا گیا ہے،ان کی تعیناتی کی منظوری یونیورسٹی سلیکشن بورڈ کی سفارش پر گزشتہ دنوں ہونے والے سینڈیکیٹ کی28ویں اجلاس میں دی گئی ہے۔

وہ پروفیسر آف پبلک ہیلتھ کے عہدے پر تعینات ہونے والے صوبے کے پہلے اور کم عمر ترین ڈاکٹرہیں جنہیں 38سال کی عمر میں پروفیسر آف پبلک ہیلتھ بی پی ایس21کے عہدے پر فائیز کیا گیا ہے۔۔ڈاکٹر ضیاء الحق کا تعلق ضلع دیر بالا کے سید خاندان سے ہے اور انہوں نے 2014میں برطانیہ کی گلاسگو یونیورسٹی سے پبلک ہیلتھ کے مضمون میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی تھی۔

(جاری ہے)

یاد رہے کہ ڈاکٹر ضیاء الحق کو پچھلے سال ہائر ایجوکیشن کمیشن کی جانب سے بیسٹ ٹیچر ایوارڈ کے علاوہ ایک لاکھ روپے نقد انعام بھی مل چکا ہے ۔انہیں یہ ایوارڈ اور انعام چند ماہ قبل اسلام آباد میں ہونے والی ایک اعلیٰ سطحی تقریب میں وفاقی وزیر تعلیم اور پروفیشنل ٹریننگ انجینئر بلیغ الرحمٰن نے دیا تھا۔پروفیسرڈاکٹر ضیاء الحق کا شمار صوبے کے مایہ ناز پبلک ہیلتھ ماہرین میں ہوتا ہے جنہوں نے صوبے میں کمیونٹی ڈینٹسٹری اور پی ایچ ڈی پبلک ہیلتھ کے اعلیٰ تعلیمی پروگرامات کے آغاز کے علاوہ صوبے کے پہلے پبلک ہیلتھ ریفرنس لیبارٹری اور بزنس اینکوبیشن سنٹر قائم کرنے کا منفرد اعزاز بھی حاصل ہوا ہے۔

دریں اثناء یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر ارشد جاوید اور رجسٹرار پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیم گنڈاپور نے ڈاکٹر ضیاء الحق کی پروفیسر پبلک ہیلتھ کے عہدے پر تعیناتی پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے توقع ظاہر کی ہے کہ پروفیسر کے عہدے پر ان کی تعیناتی سے نہ صرف انسٹی ٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ کا معیار مذید بلند ہوگا بلکہ ان کی خدمات سے صوبے کے جونیئر پبلک ہیلتھ ماہرین کو ان کی قیادت میں صوبے کے مختلف پبلک ہیلتھ مسائل پر قابو پانے میں بھی مدد ملے گی۔