سپریم کورٹ نے نندی پور پاور پراجیکٹ پر آنے والی لاگت، پیدا ہونے والی بجلی اور چینی کمپنی سے کیے جانے والے ٹھیکے کی تفصیلات طلب کر لیں

جمعرات مئی 23:08

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) سپریم کورٹ نے نندی پور پاور پراجیکٹ پر آنے والی لاگت، پیدا ہونے والی بجلی اور چینی کمپنی سے کیے جانے والے ٹھیکے کی تفصیلات طلب کر لیں۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے از خود کیس کی سماعت کی، پراجیکٹ پر کام سے ہٹانے والے واپڈا ملازمین نے عدالت کو بتایا کہ حکومت نے چینی کمپنی کو نندی پور پاور پلانٹ کا منصوبہ ٹھیکے پر دے دیا، چینی کمپنی کو آپریشن اور مرمت کا ٹھیکہ دے کر واپڈاملازمین کو گدو اور مظفر آباد پاور پلانٹس پر بھجوا دیا گیا جہاں انکی زندگیوں کو خطرات ہیں اور تنخواہیں بھی روک لی گئیں ہیں۔

سرکاری وکیل نے یقین دلایاکہ واپس بھجوائے گئے ملازمین کو تنخواہیں ادا کر دی جائیں گی،،چیف جسٹس نے کہا کہ عید قریب ہے تنخواہیں تو ادا کرنا پڑیں گی، عدالت نے واپڈا ملازمین کو آئندہ سماعت تک نئی جگہوں پر ڈیوٹی جوائن کرنے سے روک دیا اور سماعت تین یوم تک ملتوی کرتے ہوئے ٹھیکے کی تفصیلات طلب کر لیں۔