سگریٹ نوشی مضر صحت اور دل کی خرابی کی بڑی وجہ ہے ، سگریٹ نوشی ترک کرنا صحت مند دل کی علامت ہے

دنیا بھر میں ہر سال 70 لاکھ افراد تمباکو نوشی کے باعث موت کا شکا ر ہوتے ہیں جس میں ایک لاکھ اموات پاکستان میں ہوتی ہیں،پر شفا انٹر نیشنل ہسپتال میں تباکو نوشی کے خلاف عالمی دن کی تقریب سے طبی ماہرین کا خطاب

جمعرات مئی 23:10

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی تمباکو نوشی کے حوالے سے عالمی دن منایا جاتا ہے اس مو قع پر شفا انٹر نیشنل ہسپتال اسلام آباد نے طبی ماہرین سے تمباکو نوشی کے نقصانات کے متعلق رائے لی ۔۔ڈاکٹر یوسف حسن (ماہر امراض قلب شفا انٹر نیشنل ہسپتال )کا کہنا تھا کہ ایک تحقیق کے مطابق پوری دنیا میں ہر سال 70لاکھ افراد تمباکو نوشی کی وجہ سے وفات پا جاتے ہیں جن میں سے 9لاکھ افراد ایسے ہیں جو خود سگریٹ نوشی نہیں کرتے بلکہ سگریٹ کے دھو یںکی وجہ سے صحت کے شدید مسائل کا شکار ہوتے ہیں ۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ تمباکو نوشی کرنے والے 80 فیصدافراد کا تعلق کم آمدنی اور پسماندہ خطوں سے ہوتا ہے جہاں سگریٹ نوشی سے پیدا ہونے والی بہت سی بیماریاں پائی جاتی ہیں ۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر آفتاب اختر (ماہر امراض سینہ شفا انٹر نیشنل ہسپتال ) نے بتایا کہ سگریٹ نوشی مردوں میں 90فیصد اور خواتین میں 80 فیصدتک پھیپھڑوں کے کینسر کا سبب بنتی ہے ۔تمباکو نوشی میں 4000زہریلے کیمیکل موجود ہوتے جن میں سے 250انسانی صحت کے لیے خطرناک ثابت ہو سکتے ہیں اور جبکہ 70کیمیکل ایسے ہے جو کینسر کا باعث بنتے ہے،6لاکھ ایسے افراد ہیں جو سگریٹ نوشی نہیں کرتے بلکہ دھویں کی وجہ سے متاثر ہو جاتے ہیں ۔

انہوں نے مزید بتایا کہ سگریٹ نوشی کا دھواں نہ صرف مردوں اور خواتین کو اپنی لپیٹ میں لیتا ہے بلکہ 1/3حصہ بچے بھی سگریٹ نوشی کے دھویں کی زد میں آ کر متاثر ہو جاتے ہیں پان ،گٹکا،،شیشہ اور براہ راست اور با لواسطہ تمباکو نوشی سے لاحق ہونے والے کینسر کی بہت ساری اقسام ہیں جو انسانی صحت کے لیے خطرے کا سبب بنتی ہیں جن میں خون کا کینسر ،پھیپھڑوں کاکینسر ،منہ کا کینسر ،گلے کا کینسر ،معدے کا کینسر ،مثانے کا کینسر ،خواتین میں بچہ دانی کا کینسر ،آنتوں کا کینسر ،گردوں کا کینسر شامل ہے اگر ان پر بر وقت قابو نہ پایا جائے تو یہ جان لیوا ثابت ہو سکتے ہیں ۔

اس مو قع پر شفا انٹر نیشنل ہسپتال اسلام آباد نے مریضوں اور عام افراد کے لیے تمباکو نوشی کی آگاہی مہم کا آغاز کیا جس میں لوگوں کو تمباکو نوشی کے نقصانات کے متعلق معلومات فراہم کی گئی تا کہ بالخصوص ہماری نوجوان نسل کو اس موذی عادت سے بچایا جا سکے ۔

متعلقہ عنوان :