سکھر میں سوئی گیس حکام کا شاندار کارنامہ, نہ درہے اور نہ دیوار،دس ماہ سے خالی پلاٹ کو بھی ڈیٹکشن سمیت ہزاروں روپے کے بل بھیجے جانے لگی, درخواست پر بھی سوئی گیس حکام کے کانوں پر جوں تک نہ رینگی

جمعرات مئی 23:16

سکھر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) سکھر میں سوئی گیس حکام کا شاندار کارنامہ, نہ درہے اور نہ دیوار, دس ماہ سے خالی پلاٹ کو بھی ڈیٹکشن سمیت ہزاروں روپے کے بل بھیجے جانے لگی, درخواست پر بھی سوئی گیس حکام کے کانوں پر جوں تک نہ رینگی،تفصیلات کے مطابق سکھر میں بجلی کے محکمے کی جانب سے صارفین کو ڈیٹکشن بل بھیج کر صارفین کو ذہنی عذاب بنانے کا سلسلہ تو جاری ہے مگر اب سوئی گیس کے محکمے نے بھی اس کی تقلید شروع کردی ہے اور صارفین کو ڈیٹکشن بلوں کا اجراء شروع کردیا ہے فرق صرف یہ ہے کہ سیپکوکی جانب سے تو بند گھروں کوڈیٹکشن بل بھیجے جاتے ہیں مگر سوئی گیس حکام کی جانب سے توخالی پلاٹوں کو بھی ہزاروں روپیکے بل بھیج کر بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا جارہا ہے محکمہ سوئی گیس کی جانب سے موچی بازار سکھر میں اودھن داس نامی صارف کو جو بل بھیجا گیا ہے اس میں اس پر جس کنیکشن پر ہزاروں روپے کا بل بھیجا گیا ہے وہاں پر نہ تو کوئی در ہے اور نہ کوئی دیوار ہے صرف چھ ماہ سے خالی پلاٹ واقع ہے اور اس پر جو تین منزلہ عمارت تھی وہ بھی دس ماہ قبل زمین بوس ہوچکی ہے مگرسوئی گیس محکمے کے وفادار ملازمین افسران اور اہلکار پلاٹ کو بھی ہزاروں روپے کا بل بھیجنا نہیں بھولے ہیں اس سلسلے میں پلاٹ کے مالک گھنشام داس جو کہ صارف کا بھتیجا ہے اس کا کہنا ہے کہ جب ہم نے دس ماہ سے جگہ گرارکھی ہے اور خود کرائے کے مکان میں مقیم ہیں تو ہمارے پلاٹ پر کیا جن بھوت گیس استعمال کرتے ہیں اور جب میٹر ہم نے اتار رکھا ہے اور گیس کی فٹنگ تک نہیں ہے تو گیس کس طرح استعمال ہورہی ہے کہ اس کا بل بھیجا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ اگر ان کے اس مسئلے کو حل نہ کیا گیا تو پھر وہ عدالت سے رجوع کریں گے۔

متعلقہ عنوان :