مقدس القدس تمام انسانیت کا ورثہ ہے، زیارت کرنا دنیا میں ہر ایک کا حق ہے، لقمان حکیم سیف الدین

جمعرات مئی 23:16

جکارتہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) انڈونیشیا کے وزیر برائے مذہبی امور لقمان حکیم سیف الدین نے کہا ہے کہ مقدس القدس تمام انسانیت کا ورثہ ہے، القدس کی زیارت کرنا دنیا میں ہر ایک کا حق ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق انڈونیشیا کے مسلمان، القدس اور بیت المقدس جیسے مقدس مقامات کی زیارت کی خواہش رکھتے ہیں۔ اسرائیل کو سمجھ لینا چاہیے کہ مقدس القدس تمام انسانیت کا ورثہ ہے۔

انڈونیشیا کے وزیر برائے دینی امور لقمان حکیم سیف الدین نے کہا ہے کہ القدس کی زیارت کرنا دنیا میں ہر ایک کا حق ہے۔سیف الدین نے اسرائیل کی طرف سے انڈونیشیا کے سیاحوں کے لئے ملک میں داخلے کو ممنوع قرار دئیے جانے کے بارے میں جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ انڈونیشیا کے مسلمان، القدس اور بیت المقدس جیسے مقدس مقامات کی زیارت کی خواہش رکھتے ہیں۔

(جاری ہے)

اسرائیل کو سمجھ لینا چاہیے کہ مقدس القدس تمام انسانیت کا ورثہ ہے۔سیف الدین نے کہا کہ ہم وزارت خارجہ میں اسرائیل کے فیصلے پر غور کریں گے۔واضح رہے کہ اسرائیل نے گذشتہ ہفتے جاری کردہ بیان میں غزہ کی سرحد پر قتل عام کی وجہ سے انڈونیشیا کی طرف سے اسرائیلی شہریوں کے ملک میں داخلے کو ممنوع قرار دئیے جانے کا اعلان کیا تھا۔انڈونیشیا کے فیصلے کے بعد اسرائیل کی وزارت خارجہ کے ترجمان امانوئیل ناہشون نے بھی انڈونیشیا کے سیاحوں پر اسرائیل میں داخلے کو ممنوع قرار دئیے جانے کا اعلان کیا تھا۔انڈونیشیا اور اسرائیل کے درمیان سفارتی تعلقات موجود نہیں ہیں اور دونوں ملکوں کے شہری ایک دوسرے کے ملک میں داخلے کے لئے خصوصی، عارضی یا پھر ورکنگ ویزے کا استعمال کرتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :