ڈاکٹر شاہد مسعود کو گرفتار کرنے کا حکم

معروف صحافی کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین جمعہ جون 11:33

ڈاکٹر شاہد مسعود کو گرفتار کرنے کا حکم
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ یکم جون 2018ء) : معروف ٹی وی اینکر اور صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دئے گئے ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ڈاکٹر شاہد مسعود کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری سینئیر سول جج عامر عزیز نے جاری کیے۔ ایف آئی اے نے پی ٹی وی کرپشن کیس میں ڈاکٹر شاہد مسعود کے وارنٹ گرفتاری حاصل کیے۔

ذرائع نے بتایا کہ ڈاکٹر شاہد مسعود پر 3 کروڑ 80 لاکھ روپے کی بدعنوانی کا کیس ہے جس میں ایف آئی اے نے ان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری حاصل کر لیے ہیں۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ رواں ماہ کے آغاز میں سامنے آنے والا زینب قتل کیس اور اس پر مرکزی ملزم سے متعلق کیے گئے دعووں کی وجہ سے ڈاکٹر شاہد مسعود کو اس سے قبل بھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر شاہد مسعود نے نجی ٹی وی چینل کے ایک پروگرام میں بیٹھ کر زینب قتل کیس سے متعلق دعوے کیے اور کہاکہ اس کیس کا مرکزی ملزم عمران کوئی عام آدمی نہیں بلکہ اس کا تعلق غیرملکی تنظیموں سے ہے جو بچوں کو اغوا کرنے کے بعد ان سے جنسی زیادتی کرنے اور اس گھناؤنے فعل کی ویڈیوز بناتی ہیں، انہوں نےملزم عمران کے غیر ملکی اکاؤنٹس ہونے کا بھی دعویٰ کیا تھا۔

ڈاکٹر شاہد مسعود کے دعووں پر چیف جسٹس ثاقب نثار نے از خود نوٹس لیا اور ان کو طلب کر کے تفصیلات بتانے کا مطالبہ کیا۔ لیکن ڈاکٹر شاہد مسعود عدالت کے سامنے کوئی ٹھوس ثبوت پیش نہ کر سکے۔ سپریم کورٹ کی جانب سے تشکیل دی گئی تحقیقاتی کمیٹی نے اپنی رپورٹ میں ڈاکٹر شاہد مسعود کے دعوؤں اور الزامات کو جھوٹا قرار دے دیا تھا۔۔عدالت کی جانب سے انہیں معافی مانگنے کا موقع بھی دیا لیکن معروف اینکر اپنے موقف پر ڈٹے رہے ۔

لیکن اپنے دعووں کو ثابت نہ کرنے پر ڈاکٹر شاہد مسعود نے عدالت میں کہا کہ میں عدالتوں کا احترام کرتا ہوں اور تہہ دل سے معافی مانگتا ہوں۔ جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ آپ کے دل کی گہرائیوں کو بہت اچھے طریقے سے جانتا ہوں۔ بہت عرصےسے آپ کے دل کی گہرائیوں کو سن رہا ہوں۔۔چیف جسٹس نے کہا کہ اب صرف قانون کی بالادستی چلے گی۔ آپ کو پھانسی کیوں دیں؟ چاہتے ہیں کہ آپ کا سایہ آپ کے بچوں پر قائم رہے۔

جس پر ڈاکٹر شاہد مسعود کے وکیل شاہ خاور نے کہا تھا کہ عدالت کا اختیار ہر روز چیلنج ہوتا ہے۔ عدالت کی روزانہ ہونے والی تضحیک پر دکھ ہوتا ہے۔ وکیل شاہد مسعود نے کہا کہ عدالت کا احترام ضروری ہے۔ ڈاکٹر شاہد مسعود نہ صرف غیر مشروط معافی مانگنے کو تیار ہیں بلکہ اپنے ٹاک شو میں بھی غیر مشروط معافی مانگیں گے۔تاہم بعد ازاں سپریم کورٹ نے ٹی وی اینکر ڈاکٹر شاہد مسعود کے پروگرام پر تین ماہ کے لیے پابندی عائد کرنے کا حکم نامہ جاری کرتے ہوئے کیس نمٹا دیا۔