پرویز مشرف کی بھی باری آگئی، وطن واپسی کے بعد چیف جسٹس کا سب سے بڑا فیصلہ

پرویزمشرف کی تاحیات نااہلی کے خلاف اپیل 7 جون کو سماعت کیلئے مقرر، سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کو پشاور ہائیکورٹ نے الیکشن 2013 سے قبل تاحیات نااہل قرار دیا تھا چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثارکی سربراہی میں 3 رکنی بینچ 7جون کو کیس کی سماعت کریگا

جمعہ جون 13:26

پرویز مشرف کی بھی باری آگئی، وطن واپسی کے بعد چیف جسٹس کا سب سے بڑا فیصلہ
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 جون2018ء) سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کی تاحیات نااہلی کے خلاف اپیل سماعت کے لیے مقرر کردی گئی۔۔چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثارکی سربراہی میں 3 رکنی بینچ 7جون کو کیس کی سماعت کریگا ،ْاس حوالے سے سپریم کورٹ نے پرویز مشرف اور اٹارنی جنرل کو نوٹس بھی جاری کردیئے۔واضح رہے کہ سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کو پشاور ہائیکورٹ نے الیکشن 2013 سے قبل تاحیات نااہل قرار دیا تھا، جس کے خلاف انہوں نے 2016 میں سپریم کورٹ میں اپیل دائر کی تھی۔

4 اپریل 2016 کو سپریم کورٹ نے پرویز مشرف کی تاحیات نااہلی سے متعلق پشاور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل سماعت کے لیے منظور کرلی تھی۔اٴْس وقت اس کیس پر سماعت سپریم کورٹ کے چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں 5 رکنی لارجر بنچ نے کی تھی۔

(جاری ہے)

سماعت کے دوران عدالت عظمیٰ نے استفسار کیا تھا کہ انتخابات ہونے کے بعد کیا یہ اپیل اب غیر موثر نہیں ہوچکی جس پر پرویز مشرف کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا تھا کہ عدالت نے پرویز مشرف کو تاحیات نااہل قرار دیا ہے، تاحیات الیکشن لڑنے پر پابندی بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔۔سماعت کے بعد عدالت نے اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک کے لیے ملتوی کردی تھی، جو اب 7 جون 2018 کو سماعت کیلئے مقرر کی گئی ہے۔