سینئر نائب صدرسارک چیمبر افتخار علی ملک کی جسٹس (ر) ناصر الملک کو نگران وزیر اعظم کا عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد

تاجر کمیونٹی معیشت کی بحالی اور شفاف، منصفانہ اور غیرجانبدارانہ انتخابات کے انعقاد میں نگران حکومت کی مکمل حمایت کرے گی، افتخار علی ملک

جمعہ جون 16:53

لاہور ۔ یکم جون (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 جون2018ء) سارک چیمبر آف کامرس کے سینئر نائب صدر افتخار علی ملک نے جسٹس (ر) ناصر الملک کو نگران وزیر اعظم کا عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ تاجر کمیونٹی معیشت کی بحالی اور شفاف، منصفانہ اور غیرجانبدارانہ انتخابات کے انعقاد میں نگران حکومت کی مکمل حمایت کرے گی۔ جمعہ کو جاری بیان میں افتخار علی ملک نے کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ کاروباری افراد اور اداروں کو اپنا مائینڈ سیٹ تبدیل کرنا پڑے گا اور جدید تکنیک کو اپنانے، بنیادی ڈھانچے کی ترقی اور پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ پر توجہ دینا ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ نگران حکومت کو معیشت کی بحالی کیلئے تمام سٹیک ہولڈرز سے مشاورت کرنی چاہیئے اور اس سلسلے میں حکومت کو تاجروںکی بھر پور حمایت و تائید حاصل ہو گی۔

(جاری ہے)

انہوں نے مزید کہا کہ کاروباری برادری کو یونائیٹد بزنس گروپ کے مشترکہ پلیٹ فارم پر متحد ہوکر ماہرین کے تیار کردہ اقتصادی بحالی کے ایک نکاتی ایجنڈا پر متفق ہونا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ نئی بین الاقوامی مارکیٹوں کی تلاش کیلئے تاجروں کو سہولیات اور رہنمائی فراہم کرنے کی اشد ضرورت ہے۔

انہوں نے صنعت، کاروبار اور تجارت میں پیداواری خلا کو ویلیو ایڈیشن اور معیار کی بہتری سے کم کیا جا سکتا ہے جس سے مینوفیکچررز، برآمد کنندگان اور تاجروں کی آمدنی میں خود بخود اضافہ ہو گا۔ انہوں نے تجویز دی کہ بچتوں کی شرح کو 15 فیصد سے بڑھا کر جی ڈی پی کے 30 فیصد تک لایا جائے جس کی بھارت اور چین میں شرح 35 فیصد سے زائد ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت، کارپوریٹ سیکٹر اور عام آدمی سب کو اس ٹارگٹ کے حصول میں اپنا بھر پور کردار ادا کرنا ہو گا۔

افتخار ملک نے کہا کہ سیاسی میدان میں اتار چڑھائو کے باوجود پاکستان میں جمہوری سیاسی نظام کا مستقبل روشن ہے اور سیاسی نظام میں بہتری، عوام کے سیاسی شعور، ووٹ کی اہمیت اور سیاسی نظام میں خواتین کی شمولیت میں بہتری نظر آ رہی ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ نگران وزیر اعظم ناصرالملک آزاد، منصفانہ اور شفاف انتخابات کا انعقاد یقینی بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی استحکام معاشرے کے غریب طبقے کی مجموعی فلاح و بہبود، قومی معیشت کے استحکام اور فروغ کیلئے ناگزیر ہے۔ انہوں نے کہا کہ نجی شعبہ قومی ترقی میں اپنا کردار جاری رکھے گا۔