جواں سال فلسطینی نرس اسرائیلی سنائپرز کی فائرنگ سے شہید، ماں صدمے سے نڈھال

ہفتہ جون 11:10

غزہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی میں زخمیوں کو طبی امداد فراہم کرنے میں پیش پیش رہنے والی ایک جواں سال فلسطینی نرس کو گولیاں مار کر شہید کر دیا۔

(جاری ہے)

العربیہ ٹی وی کے مطابق 22 سالہ رازان نجار کو جمعہ کی شام مشرقی خان یونس میں اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ گریٹ ریٹرن مارچ کے زیر اہتمام مظاہرے کے دوران زخمی ہونے والے فلسطینیوں کی مرہم پٹی میں مصروف تھیں۔

دوسری جانب شہید فلسطینی دوشیزہ کے اہل خانہ اس واقعے پر صدمے سے نڈھال ہیں۔فلسطینی وزارت صحت نے ایک بیان میں بتایا کہ اسرائیلی فوج نے مشرقی غزہ میں حق واپسی کے لیے نکالے جانے والے مظاہروں پر فائرنگ اور آنسو گیس کی شیلنگ کی جس کے نتیجے میں ایک لڑکی شہید اور 100 سے زائد مظاہرین زخمی ہوئے ہیں۔

متعلقہ عنوان :