اردن میں ایندھن اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے پر عوامی احتجاج،

حکومت نے گھٹنے ٹیک دیئے ،فیصلہ واپس لینے کا اعلان

ہفتہ جون 14:13

عمان(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) اردن کے شاہ عبداللہ دوم نے ایندھن اور بجلی کی قیمتوں میں حالیہ اضافہ منجمد کرنے کا اعلان کیا ہے۔۔جرمن ریڈیو کے مطابق ایندھن کی قیمتوں میں ساڑھے پانچ فیصد اور بجلی کے نرخوں میں انیس فیصد اضافے پر عملدرآمد یکم جون سے شروع ہونا تھا تاہم گزشتہ شب دارالحکومت عمان اور ملک کے کئی دیگر بڑے شہروں میں عوامی احتجاج کے بعد اردنی بادشاہ نے اس پر عملدرآمد روک دیا ہے۔

(جاری ہے)

لگ بھگ ساڑھے نو ملین آبادی والے ملک اردن کو بے روزگاری اور غربت کی بلند شرح جیسے مسائل کا سامنا ہے۔ افراط زر کے سبب حالیہ دنوں میں عوامی بیچینی میں اضافہ نوٹ کیا گیا ہے۔ اردنی حکومت نے ایندھن اور بجلی کی قیمتوں میں اضافہ دو برس قبل عالمی مالیاتی فنڈ سے لیے گئے قرض کی شرائط کے تحت کیا تھا۔

متعلقہ عنوان :