بھارتی حکام نے اے این 32سودے کیلئے 17.50کروڑ روپے رشوت لی،یوکرینی حکام

رشوت دبئی میں موجود گلوبل مارکیٹنگ کمپنی کے ذریعے لی گئی،بھارتی چوکیدار مودی اپنے بدعنوان حکام کیخلاف فوری طور پر کارروائی کریں

ہفتہ جون 20:56

کیف(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) یوکرائنی حکومت نے بھارت پر الزام عائد کیا ہے کہ بھارتی حکام نے اے این 32سودے کیلئے 17.50کروڑ روپے رشوت لی،رشوت دبئی میں موجود گلوبل مارکیٹنگ کمپنی کے ذریعے لی گئی،،بھارتی چوکیدار مودی اپنیبدعنوان حکام کیخلاف فوری طور پر کارروائی کریں ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق یوکرائن حکومت نے الزام لگایاہے کہ ہندوستانی وزار ت دفاع کے حکام کو اے این 32سودے کیلئے دبئی میں واقع گلوبل مارکیٹنگ کمپنی کے ذریعے 17.50کروڑ روپے کی رشوت دی گئی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ہندوستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ یوکرائن حکومت نے الزام لگایاہے کہ ہندوستانی وزار ت دفاع کے حکام کو اے این 32سودے کیلئے دبئی میں واقع گلوبل مارکیٹنگ کمپنی کے ذریعے 17.50کروڑ روپے کی رشوت دی گئی ہے۔

(جاری ہے)

ہندوستانی ٹی وی کے مطابق راہول نے ٹویٹ کیا ہے کہ یوکرائن حکومت نے الزام لگایاہے کہ وزار ت دفاع کے حکام کو اے این 32سودے کیلئے دبئی میں واقع گلوبل مارکیٹنگ کمپنی کے ذریعے 17.50کروڑ روپے کی رشوت دی گئی ہے۔

خود کو چوکیدار اعلان کرنے والے مودی جی سے درخواست ہے کہ وہ اپنے بدعنوان حکام کیخلاف فوری طور پر کارروائی کریں۔ادھر کانگریس کے صدر راہول گاندھی نے فوجی ٹرانسپورٹ طیارہ اے این 32کے پرزوں کی خریداری میں رشوت لینے والے حکام کیخلاف فوری کارروائی کرنے کی وزیر اعظم مودی سے درخواست کی ہے۔ ہندوستانی ذرائع کے مطابق وزیر اعظم ہندوستان کے بہترین چوکیدار ثابت نہیں ہوئے۔