بھارت،شیلانگ میں پولیس اور مشتعل مظاہرین مابین جھڑپ ، کرفیو نافذ

علاقے میں بڑے پیمانے پر لوٹ مار، عمارتوں میں توڑ پھوڑ سے افراتفری پھیلنے کے سبب کرفیو کا فیصلہ کیا گیا،حکام

ہفتہ جون 20:57

شیلانگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) بھارتی علاقے میں پولیس اور مشتعل مظاہرین مابین جھڑپ کے بعد کرفیو نافذ کر دیا گیا، علاقے میں بڑے پیمانے پر لوٹ مار، عمارتوں میں توڑ پھوڑ سے افراتفری پھیلنے کے سبب کرفیو کا فیصلہ کیا گیا۔۔بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت میں میگھالیہ کے شہر شیلانگ اور اس کے اطراف کے علاقے میں گزشتہ شب پولیس مشتعل ہجوم کے درمیان پرتشدد جھڑپ کے بعد کرفیو نافذ کردیا گیا۔

تھیم مائولنگ علاقے میں شیلانگ پبلک ٹرانسپورٹ سروس کی بس کے ڈرائیوروں کے ساتھ مارپیٹ کے بعد شروع ہونے والے تشددہنوزجاری ہے اور مشتعل بھیڑ شہر کے موٹپھران علاقے میں آج سویرے تک اکٹھا رہی۔مشری کھاسی ہلس ضلع کے ڈپٹی کمشنر پیٹر ایس ڈیکھر نے بتایا کہ شیلانگ کے لومڈینگری تھانہ اور چھائونی بیٹ ہائوس علاقے میں کرفیو نافذ کردیا گیاجہاں پرتشدد جھڑپوں کے بعدامن و امان کی صورتحال خراب ہوگئی۔

(جاری ہے)

علاقے میں بڑے پیمانے پر لوٹ مار، عمارتوں میں توڑ پھوڑ سے افراتفری پھیل گئی ،،سوشل میڈیا پر افواہیں پھیلانے سے باز رکھنے کے لئے انٹر نیٹ سروس معطل کردی گئی ہے۔۔پولیس نے بتایا کہ مشتعل ہجوم کے پتھراو? میں ایک صحافی اور 4 دیگر افراد زخمی ہوگئے۔ پولیس نی3شرپسندوں کو گرفتارکرکے ان کے قبضے سے پٹرول بم اور دھار دار آلہ ضبط کرلیا۔