گرمی کی شدت میں اضافہ کے باعث روزہ داروں کی حالت خراب ہونے پر ہسپتالوں میں داخل

ہفتہ جون 21:30

پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) گرمی کی شدت میں اضافہ کے باعث روزہ داروں کی حالت خراب ہونے پر ہسپتالوں میں داخل کر دیا گیا ہے ایل آر ایچ ، کے ٹی ایچ اور ایچ ایم سی میںگزشتہ روز روز پرائیویٹ سکول جانے والے بچوں ، معمر افراد اور مزدوروں کو بھی لایا گیا جنہیں طبی امداد کے بعد ہسپتال سے فارغ کیا گیا جبکہ محکمہ موسمیات نے ہیٹ اسٹروک کے خدشات ظاہر کئے ہیں شہر کا درجہ حرارت میں اضافہ ہوگیا ہے گرمی کی شدت میں اضافہ کے باعث شہر کے بیشتر علاقوں میں برف پر بھی جھگڑے شروع ہو گئے ہیں جبکہ لوڈ شیڈنگ کے باعث روزہ داروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔

(جاری ہے)

گرمی کی شدت میں اضافہ کے باعث افطاری کے اوقات کار میں جھگڑوں میں بھی اضافہ ہو گیا ہے جمعہ کے روز صوبائی دارلحکومت پشاور کے سڑکیں گرمی کی شدت میں اضافہ کے باعث سنسان رہی ٹریفک بھی نہ ہونے کے برابر رہی ۔ جبکہ نماز جمعہ میں بارش کے لئے بھی خصوصی دعائیں مانگی گئی ۔ ایل آر ایچ ، کے ٹی ایچ اور ایچ ایم سی میں مجموعی طور پر گرمی سے متاثر ہونے والے چوبیس شہریوں کو لایا گیا ۔جن میں بعض خواتین بھی شامل تھی

متعلقہ عنوان :