انتخابات وقت مقررہ پر منعقد ہونے چا ہئیں ،سینیٹر سردار یعقوب خان ناصر

حلقہ بندیوں کو بنیاد بنا کر الیکشن میں تاخیر قبول نہیں اور حقیقی معنوں میں عوامی نمائندوں کی اپیلوں کو سن کر فیصلے کئے جائیں مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے اپنی آئینی مدت پوری کر کے دوسری جمہوری منتخب مدت پوری کرنیوالی حکومت بن گئی ہے آنیوالے الیکشن میں عوام کارکردگی کی بنیاد پر نمائندوں کا چنائو کرینگے پارٹی نے ملک بھر میں امن کی بحالی اور دیگر معاملا ت کو بہتر بنانے میں جو کردار ادا کیا ہے وہ روز روشن کی طرح سب کے سامنے عیاں ہے،افطار پارٹی سے خطاب

ہفتہ جون 22:08

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) پاکستان مسلم لیگ(ن) کے مرکزی سینئر نائب صدر وسینیٹر سردار یعقوب خان ناصر نے کہا ہے کہ انتخابات وقت مقررہ پر منعقد ہونے چا ہئیں حلقہ بندیوں کو بنیاد بنا کر الیکشن میں تاخیر قبول نہیں اور حقیقی معنوں میں عوامی نمائندوں کی اپیلوں کو سن کر فیصلے کئے جائیں پاکستان مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے اپنی آئینی مدت پوری کر کے دوسری جمہوری منتخب مدت پوری کرنیوالی حکومت بن گئی ہے اور آنیوالے الیکشن میں عوام کارکردگی کی بنیاد پر نمائندوں کا چنائو کرینگے پارٹی نے ملک بھر میں امن کی بحالی اور دیگر معاملا ت کو بہتر بنانے میں جو کردار ادا کیا ہے وہ روز روشن کی طرح سب کے سامنے عیاں ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ شب مختلف سیاسی جماعتوںاور قبائلی عمائدین سمیت دیگر رہنمائوں کے اعزاز میں دی گئی افطار پارٹی کے شرکاء سے گفتگو کے دوران کیا اس موقع پر پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سید ال خان ناصر، سیکرٹری اطلاعات فرید افغان، ، قبائلی وسیاسی رہنماء میر لیاقت لہڑی ،میر صلاح الدین رند،ارباب اقبال، نسیم الرحمان ملا خیل ، پاکستان مسلم لیگ(ن) بلوچستان کے پارلیمانی بورڈ کے ممبر ملک رفیق ایوان، ہاشم خان بڑیچ ، ہمایوں خان الکوزئی ایڈووکیٹ، حاجی فاروق یوسفزئی، کمال خان باروزئی ، ظہور درانی، اقلیتی رہنماء عمانو ایل مسیح، جاوید احمد،سلیم جبار پپو،نظام خان کاکڑ، یوسف کاکڑ ، عارف بازئی ، حاجی شینو گل خلجی، حاجی عبدالقیوم ملا خیل، سید اخلاق شاہ ایڈووکیٹ،امین الدین ایڈووکیٹ،حیدر اچکزئی،شیر خان بختیار ،جمال شاہ کاکڑ، میر گوہر مینگل،نصیرخان اچکزئی سمیت دیگر بھی موجود تھے سردار یعقوب ناصر نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے عجلت میں کی جانیوالی حلقہ بندیوں پر سیاسی نمائندوں اور لوگوں کے تحفظات ہے جس کی وجہ سے نمائندوں نے مختلف حلقوں کے بارے میں الیکشن کمیشن آف پاکستان میں اپیلیں دائر کر رکھی ہے جن پر عدالتی احکامات بھی آرہے ہیں انہوںنے کہا ہے کہ اگر عوامی نمائندوں کو اعتماد میں لے کر حلقہ بندیاں کی جاتی تو یہ صورتحال نہ ہو تی کیونکہ اب مختلف حلقوں پر عدالت میں کیسز زیر سماعت ہیں اور ان کیسز کو کو جلدی نمٹا کر فیصلے کئے جائے تاکہ یہ کیسز انتخابات کی تاخیر کا سبب نہ بن سکیںانہوں نے کہا ہے کہ فیصلے عجلت کی بجائے میرٹ پر آئینی تقاضوں کو مد نظر رکھ کر کئے جائے تاکہ کسی کو بھی تحفظات نہ رہے اور نہ ہی فیصلوں پر کوئی ابہام ہو انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے اپنی آئینی مدت پوری کر کے پاکستان میں دوسری جمہوری مدت پوری کرنیوالی حکومت کا اعزاز حاصل کیا ہماری دعا ہے کہ آنیوالی جمہوری حکومت بھی اپنی آئینی مدت پوری کر ے تاکہ ملک میں جمہوریت اور پارلیمنٹ مضبوط ہو انہوںنے کہا ہے کہ حکومت نے جس طرح ملک بھر میں امن کی بحالی کے لئے جو کردار ادا کیا ہے وہ قابل تحسین ہے امن کی بحالی کیساتھ ساتھ دیگر امور کی بہتری کے لئے بھی ترجیحی بنیادوں پر کام کئے گئے ہیں اور جماعت کی کارکردگی روز روشن کی طرح سب کے سامنے عیاں ہے انہوں نے کہا ہے کہ آنیوالے انتخابات میں مسلم لیگ(ن) عوام کی طاقت سے بر سر اقتدار آئے گی اور عوام اپنے حقیقی نمائندوں کو اپنے حق رائے دہی سے کامیا ب بنا کر ایوان میں بھیجے تاکہ وہ ان کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کر کے انہیں زندگی کی بنیادی سہولیات فراہم کر سکے۔