قلات میں سوئی سدرن گیس کمپنی نے غریب عوام کو دونوں ہاتھو ں سے لوٹنا شروع کردیا اوور بلنگ پر صارفین کا پریس کلب کے سامنے شدید احتجاجی مظاہرہ

ہفتہ جون 22:21

قلات(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) قلات میں سوئی سدرن گیس کمپنی نے غریب عوام کو دونوں ہاتھو ں سے لوٹنا شروع کردیا ہے سوئی گیس حکام خود اقرار کرتے ہیں کہ قلات میں گیس پریشر نہیں پہنچتا ہے مگر اس کے برعکس قلات کے صارفین کو ہزاروں روپے بلز بھیجنے پر شہریوں میں شدید غم غصہ پایا جاتا ہیںقلات میں سوئی گیس کمپنی کی اوور بلنگ پر صارفین کا پریس کلب کے سامنے شدید احتجاج احتجاجی مظاہرے کی قیادت ابو مقصود محمداکبر منظور احمد محمد عظم اور دیگر نے کیا مظاہرین نے کمپنی کی جانب سے اوور بلنگ بند نہ کر نے کی صورت میں گیس بلوں کی ادائیگی بند کرنے کی دھمکی دے دی مظارہین کا کہنا تھا کہ سوئی گیس کمپنی کی جانب سے قلات کو گزشتہ کئی سالوں سے سوئی گیس فراہم نہیں کی جارہی ہے اس سے قبل سوئی کمپنی کی جانب سے قلات میں گیس پریشر زیرو تھا پھر بھی کمپنی کی جانب سے 500 سو سے ایک ہزار تک مفت کا بلز وصول کرتی تھی جسے قلات کے غریب لوگ مجبورًً ادا کرتی تھی مگر اب ایک دم لوگوں کو ہزاروں روپے کے بلز بھیجنے شروع کردیئے ہیں جو کیس بھی صورت میں قلات کے شہریوں کو قبول نہیں انہوں نے کہا کہ سوئی گیس حکام قلات کے صارفین کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے لگے ہیں جو ناقابل برداشت ہیں انہوں نے کہا کہ سوئی گیس کمپنی کی جانب سے بغیر نوٹس دیئے لوگوں کے گیس میٹروں کو تبدیل کرتے ہیں اور خرابی کا بہانہ بنا کر صارفین کو ہزاروں روپے کے بلز بھیج دیتے ہیں اور خود بھی اس بات کا اقرار کرتے ہیں کہ قلات میں سوئی گیس کی پریشر نہ ہونے کے برابر ہیں مگر اس کے باوجود صارفین کو ہزاروں روپے کے بلز بھیجنا سمجھ سے بالاتر ہیں انہوں نے دھمکی دی کہ اگر سوئی گیس کمپنی نے اپنا رویہ ترک نہیں کیا تو قلات کے تمام صارفین بلوں کی ادائیگی روک دیں گے۔