اٹک،ناجائز تعلقات کے سلسلہ میں 3 بچوں کی ماں گھر سے فرار

15 روز گزرنے کے باوجودٴ پولیس سراغ لگانے میں ناکام

ہفتہ جون 22:50

اٹک (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) ناجائز تعلقات کے سلسلہ میں گھر سے فرار ہونے والی 3 بچوں کی ماں کا 15 روز گزر جانے کے باوجود تھانہ انجرأ پولیس سراغ لگانے میں ناکام ، فرار ہونے والی خوبرو 3 بچوں کی ماں کی 3 بچیاں ماں سے بچھڑ جانے کے سبب دن رات رو رو کے ہلکان ، ڈی ایس پی جنڈ اور ایس ایچ او تھانہ انجرأ روایتی پولیس کا کردار ادا کرتے ہوئے مدعی کو جھوٹی تسلیاں دینے میں مصروف ، تفصیلات کے مطابق محمد ایاز ولد محمد یوسف خٹک نے انچارج چوکی لکڑمار سب انسپکٹر لیاقت علی کے ذریعہ تھانہ انجرأ میں 20 مئی کو ایف آئی آر درج کرائی کہ وہ دکانداری کرتا ہے اور اس کا بھائی ربنواز یوسف جو کراچی میں پاک آرمی میں ملازمت کرتا ہے جس کی بیوی گلناز بی بی اپنی 3 بیٹیوں کے ہمراہ میرے ساتھ رہائش پذیر ہے سمیع اللہ ولد امل خان پٹھان سکنہ نکہ افغان تھانہ انجرأ جس نے چوری چھپے میری بھابھی گلناز بی بی کیساتھ ناجائز تعلقات قائم کر لیے وہ اپنی بیوی بچوں کے ہمراہ سو گیا تو اس کی بھابھی گلناز بی بی نے اپنے فون نمبر 0349-2830814 سے سمیع اللہ کو اطلاع دی جو موٹر سائیکل پر سوار آیا اور میری بھابھی گلناز بی بی کو اغواء کر کے لے گیا جس کو اہل محلہ نے دیکھا میری بھابھی کو سمیع اللہ زناء کاری کی خاطر لے کر چلا گیا ہے پولیس نے زیر دفعہ 496-A ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے تفتیش اے ایس آئی ملک شوکت حیات کر رہے ہیں تاہم 15 روز گزر جانے کے باوجود پولیس کی کارکردگی غیر تسلی بخش ڈی ایس پی جنڈ اور ایس ایچ او انجرأ سمیت دیگر پولیس افسران مدعی کو جھوٹی تسلیاں دے رہے ہیں جبکہ فرار ہونے والی خوبرو خاتون کی 3 بچیاں ماں کی محبت میں رو رو کر بیمار ہو چکی ہیں ۔