عید الفطر کی آمد قریب آتے ہی درزیوں نے کپڑوں کی سلائی کیلئے آرڈرز کی بکنگ بند کر دی

اتوار جون 12:30

فیصل آباد۔3 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 جون2018ء) عید الفطر کی آمد قریب آتے ہی درزیوں نے کپڑوں کی سلائی کے آرڈر لینے بند کر دیئے اور دکانوں کے باہر نو بکنگ کے بورڈ آویزاں کردیئے جس کی وجہ سے ریڈی میڈ ملبوسات کی مانگ میں اضافہ ہو گیا۔ اے پی پی کے سروے کے مطابق شہر بھر کے درزیوں نے کام کے زیادہ رش اور بجلی کی بار بار لوڈ شیڈنگ کے باعث ملبوسات کی سلائی کے نئے آرڈر لینے بند کر دیئے۔

ایک درزی نعیم نے بتایا ہے کہ رمضان المبارک کی آمد سے قبل ہی ہمارے پاس بہت زیادہ کپڑوں کی سلائی کے آرڈر بک ہو گئے تھے لہٰذ ا ہم پہلے سے لئے ہوئے آرڈر ز کوپورا کرنے کی کوشش کریں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کی وجہ سے بہت پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور کام رک جاتا ہے جس کی وجہ سے کاریگروں کو دن رات کام کرنا پڑ رہا ہے اور ا نہیں آرام کیلئے وقت بھی بہت کم ملتا ہے۔

(جاری ہے)

انارکلی بازار میں بچوں کے ملبوسات کی خریداری کرنے والے ایک شہری طارق جاوید نے بتایا کہ درزیوں نے سلائی کے ریٹ بہت بڑھا دیے ہیں اور مارکیٹ میں کپڑے بھی بہت مہنگے ہیں اسلئے میں نے بچوں کے ریڈی میڈ ملبوسات خریدنے کا فیصلہ کیا ہے یہ مناسب قیمتوں اور اچھے ڈیزائن میں مل جاتے ہیں۔ اکثر شہریوں کا کہنا تھا کہ مہنگائی اتنی بڑھ گئی ہے کہ روز مرہ ضر وریات کی اشیاء کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگ گئی ہیں جس کے باعث اس بار عید پر نئے کپڑوں کی خریداری کا فیصلہ ملتوی کر دیا گیا ہے اور پرانے کپڑوں کے ساتھ ہی عید کی خوشیوں میں شریک ہونگے ۔