کوئٹہ میں کوئلے کی کان بیٹھنے سے کئی مزدور دب گئے، چارکی لاشیں نکال لی گئیں

اتوار جون 13:30

کوئٹہ میں کوئلے کی کان بیٹھنے سے کئی مزدور دب گئے، چارکی لاشیں نکال ..
کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 جون2018ء) کوئٹہ میں کوئلے کی کان بیٹھنے سے کئی مزدور دب گئے، چار کی لاشیں نکال لی گئیں۔میڈیا رپورٹ کے مطابق کوئٹہ کے علاقے سنجدی میں کوئلے کی کان بیٹھنے سے ابتدائی اطلاعات کے مطابق وہاں کام کرنے والے 6 مزدور پھنس گئے جن میں سے 4 کی لاشیں نکال لی گئیں۔

(جاری ہے)

کوئٹہ میں چند ہفتوں کے دوران کان بیٹھنے کا یہ تیسرا واقعہ ہے، چیف مائینز انسپکٹر افتخار احمد کے مطابق سنجدی میں کان حادثے میں پھنسے مزدوروں کو نکالنے کے لیے ریسکیو آپریشن تیز کردیا گیا ہے۔

چیف انسپکٹر کول مائن نے کہاکہ کان بیٹھنے کے باعث کان میں دبنے والے دیگر 7 مزدوروں کو بے ہوشی کی حالت میں نکال لیا گیا اور انہیں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔یاد رہے کہ گزشتہ ماہ بھی کوئٹہ کے دو مختلف علاقوں مارواڑ اور اسپین کاریز میں کوئلے کی کان بیٹھنے کے واقعات پیش آئے تھے۔دونوں حادثات میں مجموعی طور پر 18 مزدور جاں بحق ہوئے جن میں سے بیشتر کا تعلق سوات کے علاقے شانگلہ سے تھا جن کی میتیں بعدازاں آبائی علاقے بھیجی گئیں۔

متعلقہ عنوان :