نگراں وزیر اعلی بلوچستان،سابق وزیراعلی، قائد حزب اختلاف کے درمیان ملاقات بے نتیجہ ختم

معاملہ (آج) بلوچستان اسمبلی کی پارلیمانی کمیٹی میں بھیجا جائیگا

اتوار جون 18:10

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 جون2018ء) نگراں وزیر اعلی بلوچستان کے معاملے پر سابق وزیراعلی عبدالقدوس بزنجواورعبدالرحیم زیارتوال کی پانچویں ملاقات بے نتیجہ ختم ہوگئی،معاملہ (آج) پیر کو بلوچستان اسمبلی کی پارلیمانی کمیٹی میں بھیجا جائیگا ۔ تفصیلات کے مطابق نگران وزیراعلی بلوچستان کا نام فائنل کرنے کیلئے سابق وزیراعلی بلوچستان عبدالقدوس بزنجو اورقائد حزب اختلاف عبدالرحیم زیارت وال کے درمیان بات چیت کا ایک اور دوربغیر کسی نتیجے کے ختم ہوگیا۔

(جاری ہے)

ابتک نگران وزیراعلی کے نام کافیصلہ کرنے کیلئے سابق وزیراعلی بلوچستان اور سابق قائد حزب اختلاف کے درمیان چار ملاقاتیں ہوچکی ہیں تاہم یہ ساری بے نتیجہ رہیں۔اگر ملاقاتوں میں فیصلہ نہ ہوسکا تو معاملہ (آج) پیر کو بلوچستان اسمبلی کی پارلیمانی کمیٹی میں بھیجا جائیگا جوکہ نگران وزیراعلی کے نا م پر تبادلہ خیال کے بعد حکومت اور حزب اختلاف کے درمیاں اتفاق ہوجانے پر اعلان کرے گی۔دوسری صورت میں اگر پارلیمانی کمیٹی بھی نگراں وزیراعلی کے نام پر متفق نہ ہوسکی تو یہ 4 نام الیکشن کمیشن کو حوالے کرے گی اور وہ دودن کے اندر نگراں وزیراعلی کے نام کا اعلان کرے گی۔