حیدرآباد،غزوہ بدرحق اور باطل کے درمیان فرق اور امتیاز کرنے والا یعنی یوم الفرقان ہے،ڈاکٹر صاحبزادہ ابوالخیرمحمد زبیر

جس سے اسلام کی فتح و نصرت کے دروازے کھل گئے 17رمضان المبارک کو ہی قائد ملت اسلامیہ امام شاہ احمد نورانی رحمة اللہ علیہ کی ولادت ہوئی آپ نے ساری زندگی حق اور باطل کے درمیان فرق کیا،صدر نظام مصطفیٰ محاذ

اتوار جون 20:20

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 جون2018ء) جمعیت علماء پاکستان (نورانی) ملی یکجہتی کونسل اورنظام مصطفیٰ محاذ کے صدر ڈاکٹر صاحبزادہ ابوالخیرمحمد زبیر نے غزوہ بدرویوم ولادت قائدملت اسلامیہ شاہ احمد نورانی رحمة اللہ علیہ کے سلسلے میں رحمن ٹاون پھلیلی میں ناظم علی آرائیںکی رہائشگاہ پرجے یو پی حیدرآباد کی دعوت افطار کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ غزوہ بدرحق اور باطل کے درمیان فرق اور امتیاز کرنے والا یعنی یوم الفرقان ہے جس سے اسلام کی فتح و نصرت کے دروازے کھل گئے 17رمضان المبارک کو ہی قائد ملت اسلامیہ شاہ احمد نورانی رحمة اللہ علیہ کی ولادت ہوئی آپ نے ساری زندگی حق اور باطل کے درمیان فرق کیاعصبیتوں کے بتوں کو پاش پاش کرکے مسلم قومیت کے نظریہ کو پروان چڑھایاختم نبوت کے قوانین بنائے اور قادیانیوں کو غیر مسلم اقلیت قرار دلوایاغزوہ بدر سے سبق ملتا ہے کہ ختم نبوت ﷺاور ناموس رسالت ﷺکے تحفظ کیلئے کسی قربانی سے دریغ نہ کریں باطل کے سامنے ڈٹ جائیں غزوہ بدر کے مجاہدوں کا جذبہ لے کر میدان عمل میں نکلیںتو اللہ فتح ونصرت کے دروازے کھول دیتاہے جس طرح 2002ء الیکشن میں عصبیوں کے آفتاب کو شکست کردے کر اسلام کے پرچم کو بلند کیا تھااب بھی الیکشن2018ء میں ختم نبوت کے وفادار عظمت مصطفیٰ ﷺ کے محافظین کامیاب ہوں گے اور پارلیمنٹ میں ختم نبوت ﷺاورناموس رسالت ﷺکے قوانین کا تحفظ اور نظام مصطفیٰ ﷺ کو اقتدار میں لانے کیلئے صدائے حق بلند کریں گے انہوں نے کہا کہ70سالوں سے خائن بدعنوان چور لٹیرے کرپٹ اور ظالم حکمران اقتدار میں آتے رہے ہیں جنہوں نے دونوں ہاتھوں سے ملک اور قوم کی خون پسنے کی کمائی کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا سودی نظام کوجاری رکھاجنسی بے راہ روی کے قوانین بنا کر معاشرے کو مادرپدرآزاد کرنے اور اسلامی تشخص مٹانے کی کوشش کی ختم نبوت ﷺ اور ناموس رسالت ﷺ جیسے اہم قوانین میں ترامیم کے کے مغربی استعماری قوتوں کے مکروہ عزائم کی تکمیل کی لیکن عاشقان مصطفیٰ ﷺ نے میدان عمل میں نکل کر سیکولر لبرل حکمرانوں کے مکروہ عزائم خاک ملادئیے جس پر حکمرانوں کو پسپائی کا سامنا کرنا پڑاانہوں نے کہا کہ اسلام کے آفاقی پیغام نظام مصطفیٰ ﷺ کو اقتدار میں لانے کیلئے قوم کوغزوہ بدر کے مجاہدوں کا عزم لے کر میدان عمل میں نکلنا ہوگاباطل قوتوں کو شکست دے کر ہی ہم اسلام کے حقیقی پیغام کو فروغ دے سکتے ہیں دعوت افطار سے قاری نیاز احمد نقشبندی ،ناظم علی آرائیں ،حافظ اشفاق حسین قادری ،ارشاد حسین نقشبندی ،قاری نصر اللہ نے بھی خطاب کیا دعوت افطار میں صاحبزادہ محمود احمد قادری ڈاکٹر محمد یونس دانش ،مولانا محمد جمن نقشبندی،حافظ محمد اکبر،،ڈاکٹر عارف اللہ شاہ ،میر شاہ محمد،چاند نبی،سید منیر حیدرشاہ عبدالغفار اویسی،محمد رضوان شیخ،،ڈاکٹر وقار،عبداسمیع مغل ،حافظ عبدالرحیم ،حاجی یوسف قریشی سمیت مختلف شعبہ زندگی سے وابستہ اہم سیاسی ،سماجی مذہبی شخصیات نے شرکت کی۔