کوئٹہ، لاہور میں ایک منصوبے کے تحت پشتونوں پر تشد د کیا جا رہا ہے،پشتونخواملی عوامی پارٹی

اگر پنجاب حکومت نے اس کا فوری طور پر تدارک نہ کیا تو ہم سخت اقدام اٹھانے پر مجبور ہونگے،مرکزی رہنماء سابق صوبائی وزیر عبیداللہ بابت کی لاہور میں پشتونوں پر انتظامیہ کی جانب تشدد کی مذمت

اتوار جون 22:40

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 جون2018ء) پشتونخواملی عوامی پارٹی کے مرکزی رہنماء سابق صوبائی وزیر عبیداللہ بابت نے لاہور میں پشتونوں پر انتظامیہ کی جانب تشدد کی مذمت کر تے ہوئے کہا ہے کہ لاہور میں ایک منصوبے کے تحت پشتونوں پر تشد د کیا جا رہا ہے اگر پنجاب حکومت نے اس کا فوری طور پر تدارک نہ کیا تو ہم سخت اقدام اٹھانے پر مجبور ہونگے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے جاری کر دہ بیان میں کہا ہے کہ پشتون لاہور میں کاروبار کر تے ہیں اور کاروبار کی غرض سے وہ اپنے بچوں کے پیٹ پالتے ہیں مگر بد قسمتی سے گزشتہ کئی عرصے سے لاہور اور پنجاب کے مختلف علاقوں میں ایک سازش کے تحت پشتون مزدوروں اور کاروبار کرنے والوں پر تشدد کئے جا تے ہیں اور تنگ کیا جا تا ہے ہم نے بار ہا کو شش کی ہے کہ معاملے کو حل کیا جائے مگر پنجاب انتظامیہ اور حکومت نے اس حوالے سے کوئی اقدام نہیں اٹھا رہے اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو ہم بھی سخت احتجاج کر نے پر مجبور ہونگے انہوں نے کہا ہے کہ ہمیں مجبور نہ کیا جائے کہ ہم بھی وہی سلوک کرے جو پنجاب میں پشتونوں کیساتھ کیا جا رہا ہے انہوں نے کہا ہے کہ بلوچستان میں نئی بننے والی پارٹی کی کوئی حیثیت نہیں ہے اور پشتونوں کی سرزمین آب وہوا اس مصنوعی پارٹی کو قبول کرنے کے لئے تیار نہیں ہے ہم سمجھتے ہیں کہ یہ کاغذی لوگ ہے اور مستقبل میں ان کا کوئی وجود نہیں رہے گاپشتون عوام ان سازشوں کو ناکام بنا ئے انہوں نے کہا ہے کہ لاہور میں ایک منصوبے کے تحت پشتونوں پر تشد د کیا جا رہا ہے اگر پنجاب حکومت نے اس کا فوری طور پر تدارک نہ کیا تو ہم سخت اقدام اٹھانے پر مجبور ہونگے۔