ٹرمپ کی پالیسیوں سے امریکی غریب سے غریب تر ہو رہے ہیں،اقوام متحدہ

غریب طبقوں کو مزید دیوار سے لگانے کے بجائے انہیں سیفٹی نیٹ میں شامل کرکے سماجی تحفظ فراہم کیا جائے ،اپیل

پیر جون 14:00

ٹرمپ کی پالیسیوں سے امریکی غریب سے غریب تر ہو رہے ہیں،اقوام متحدہ
جینوا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 جون2018ء) اقوام متحدہ کا ادارہ برائے انسانی حقوق نے خبردار کیا ہے کہ امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی حالیہ معاشی پالیسیوں کی وجہ سے امریکا میں غربت کا تناسب تیزی سے بڑھ رہا ہے جبکہ غریب مسلسل غریب اور دولت مندوں کو نوازنے کا سلسلہ جاری ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کی خصوصی ایلچی برائے انتہائی غریب فلپ ایلسٹن نے متعلقہ حکام پر زور دیا کہ امریکا کے غریب طبقوں کو مزید دیوار سے لگانے کے بجائے انہیں سیفٹی نیٹ میں شامل کرکے سماجی تحفظ فراہم کیا جائے اور ان کے مسائل کے سدباب کیلیے موثر حکمت عملی واضع کی جائے۔

رپورٹ کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کی حالیہ ٹیکس پالیسی ‘فنانشنل وینڈ فال’ کے باعث لاکھوں امریکی سماجی بہبود پر مشتمل مراعات اور ہیلتھ انشورنس سے محروم ہو گئے ہیں اور مذکورہ پالیسی سے متمدل اور امیر طبقہ ہی فائدہ اٹھا رہا ہے۔

(جاری ہے)

اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی نے بتایا کہ امریکا میں انتہائی غربت نئی بات نہیں اور 1960 میں اس وقت کے صدر کی غربت کے خلاف جنگ میں اٹھائے گئے اقدامات قطعی طور پر نظر انداز کیے جارہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ گزشتہ چند برسوں سے جان بوجھ کر غریب مخالف پالیسیاں مرتب کی جارہی ہیں جس سے شہری کو بنیادی حقوق سے محروم کردیا جائے، بے روزگار افراد کو سزا دی جائے، صحت کی بنیادی سہولیات کو شہری حقوق سے نکال کر ایسی مراعات بنادی جائے جس کی قیمت ہو۔