ذیابیطس کے مریضوں کوہفتے میں دو بارلازمی فٹبال کھیلنا چاہیے، ماہرین

پیر جون 15:50

کوپن ہیگن ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 جون2018ء) ڈنمارک میں سائنسدانوں نے ایک نئی طبی تحقیق میں ذیابیطس کے مریضوں کو ہفتے میں دو بار فٹ بال کھیلنے کی تجویز دی ہے۔جنوبی ڈنمارک میں میڈیکل سائنس کالج کے محققین کی طرف سے جاری کردہ تحقیق میں کہا گیا ہے کہ دوسرے درجے کے ذیابیطس کے مریضوں کو ہفتے میں دو بار فٹ بال کھیلنے کی پریکٹس کرنے سے بیماری کی کمزوری دور کرنے میں مدد ملے گی۔

اس ورزش سے دل کی صحت پر بھی مثبت اثر پڑے گا اور خون کی شریانیں بھی سکڑنے سے بچیں گی۔

(جاری ہے)

جدید تحقیق کی تیاری کے دوران ماہرین نے ذیابیطس کے فٹ بال کھیلنے والے مریضوں کے 50 رکنی ایک گروپ کی صحت کا جائزہ لیا۔ اس گروپ میں 55 سال سے 77 سال کی عمرکے مردو خواتین شامل تھے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ہفتے میں دو بار کچھ دیر تک فٹ بال کھیلنے والے افراد میں موٹاپے کے اثرات بھی کم ہوئے ہیں اور ان کا وزن بھی کم ہوا۔ یہ تحقیق مسلسل 16 ہفتے جاری رہی اور ذیابیطس کے مریضوں کو ہفتے میں دو بار فٹ بال کھیلنے کے عمل سے گذارا گیا۔سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اس تجربے کا مقصد غذائی صحت کے نظام کو فالو کرتے ہوئے ورزش کے ذیابیطس کے مریضوں پر اثرات کا جائزہ لینا تھا۔