آئی ایم ایف کے کہنے پر قیمتوں میں اضافہ،اردنی عوام سڑکوں پر ،وزیراعظم سے استعفی کا مطالبہ

اردن کے شاہ عبداللہ نے وزیر اعظم ہانی ملکی کو اپنے محل میں طلب کر لیا ،وزیراعظم سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کریں گے،ذرائع

پیر جون 16:30

عمان(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 جون2018ء) اردن کے دارالحکومت عمان میں حکومت کی معاشی پالیسیوں، مہنگائی اور ٹیکس بل کے خلاف احتجاج کا سلسلہ جاری ہے اور کئی دنوں سے سڑکوں پر ہونے والے مظاہروں نے ریاست کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔عرب ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مظاہرین کی جانب سے کابینہ دفتر کے قریب احتجاج کیا گیا، اس دوران مظاہرین نے پلے کارڈز اٹھارکھے تھے، جن پر اردن کے وزیر اعظم ہانی الملکی کی برطرفی کے نعرے درج تھے۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ وہ حکومت کی جانب سے پارلیمان میں بھیجے گئے ٹیکس بل کی واپسی تک احتجاج جاری رکھیں گے، کیونکہ اس بل سے عوام کا معیار زندگی بری طرح متاثر ہوگا۔۔احتجاج کرنے والے مظاہرین کا کہنا تھا کہ یہ حکومت شرمناک ہے اور ہم تب تک یہاں موجود رہیں گے جب تک حکومت بل کو واپس نہیں لے لیتی، ہمارا مطالبہ جائز ہے اور ہم کرپشن کی اجازت نہیں دیں گے۔

(جاری ہے)

انہوں نے اردن کی متحد طاقت سمجھے جانے والے شاہ عبداللہ دوئم پر زور دیا کہ وہ ایسے حکام کے خلاف کارروائی کریں۔ادھر حکومت کی معاشی پالیسوں کے خلاف جاری احتجاج کے بعد یہ متوقع ہے کہ اردن کے شاہ عبداللہ وزیر اعظم ہانی ملکی سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کریں۔اس حوالے سے ذرائع کا کہنا تھا کہ شاہ عبداللہ کی جانب سے وزیر اعظم ہانی ملکی کو اپنے محل طلب کرلیا گیا ہے۔