پاکستان برازیل بزنس فورم کی بنیاد رکھ دی گئی،ہیڈکواٹر اسلام آباد میں، شاخیں ملک بھر میں ہوں گی، صدر ایف پی سی سی آئی

تعلیم، ٹیکسٹائل، زراعت ، سپورٹس اور فارما کے شعبوں میں تعاون کے وسیع امکانات ہیں،محصولاتی و غیر محصولاتی رکاوٹیں ختم کر کے تجارت بڑھائی جائے گی،غضنفربلور

پیر جون 16:40

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 جون2018ء) پاکستان اور برازیل کے مابین تجارت میں اضافہ کیلئے پاکستان برازیل بزنس فورم کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جس کا ہیڈ کواٹر اسلام آباد میں ہو گا جبکہ اسکی شاخیں ملک بھر اور برازیل میں ہو نگی۔ اس بات کا اعلان پاکستان میں برازیل کے سفیر کلاوجو لنزاور ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور نے ایک تقریب کے دوران کیا جس میں ملک بھر سے کاروباری برادری کے رہنمائوں نے شرکت کی۔

کلاوجو لنزاور غضنفر بلور نے کہا کہ ہم دونوں ممالک کے مابین تجارت کو اسکے حقیقی پوٹینشل تک پہنچانا چاہتے جس کے لئے درامد و برامدکنندگان کے مسائل حل کرنا ہونگے تاکہ روزگار، کاروبار اور محاصل میں اضافہ ہو ۔ انھوں نے کہا کہ برازیل دنیا کی آٹھویں بڑی معیشت ہے مگر پاکستان سے اسکی دو طرفہ تجارت نصف ارب ڈالر سے کچھ زیادہ ہے جسے بڑھانے کی ضرورت ہے۔

(جاری ہے)

باہمی تجارت کا جھکائو برازیل کی طرف ہے جسے متوازن بنانے کی کوشش کی جائے گی۔انھوں نے کہا کہ برازیل پن بجلی اور قابل تجدید زرائع سے بجلی کی پیداوار میں منفرد مقام رکھتا ہے جس سے پاکستان فائدہ اٹھا سکتا ہے۔اسکے علاوہ تعلیم،، ٹیکسٹائل، زراعت ، سپورٹس اور فارما کے شعبوں میں تعاون کے وسیع امکانات ہیں۔اس موقع پر فورم کے چئیرمین کو آرڈینیشن ملک سہیل نے کہا کہ متعدد یورپی ممالک پاکستانی مصنوعات درامد کر کے انھیں برازیل کی منڈی میں مہنگے داموں فروخت کر رہے ہیں جس سے دونوں پاکستانی اور برازیلین کاروباری برادری کے مابین رابطوں کی کمی کا پتہ چلتا ہے۔

نئے بننے والے فورم کے عہدیداروں اور ممبران میں مظہر علی ناصر، کریم عزیز ملک، عاطف اکرام شیخ، ملک زبیر، عامر عطاء باجوہ، عدیل روف، احمد عزیز بلور، عامر فاروق، آمنہ منور اعوان، عزرا جمشید، حسن منشاء، حزیفہ صدیقی، افتخار خان، عرفان الحق قریشی، مس مہتاب خان، منیب صدیقی، عمر جعفر، ریاض ارشد، رمولا نویس، سمرا اختر اور تنویر افسر ملک شامل ہیں۔