پولیس کانسٹیبل کی جانب سے نملی میرا میں محکمہ جنگلات کے اہلکار پر تشدد، تھانہ بگنوتر میں مقدمہ درج کر لیا گیا

پیر جون 20:47

ایبٹ آباد۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 جون2018ء) پولیس کانسٹیبل کی جانب سے نملی میرا میں محکمہ جنگلات کے اہلکار پر تشدد، تھانہ بگنوتر میں مقدمہ درج کر لیا گیا۔

(جاری ہے)

اس ضمن میں پولیس اور مقامی ذرائع نے صحافیوں کو بتایا کہ بنیامین ولد خوشی محمد ایبٹ آباد جو پولیس کا ملازم بتایا جاتا ہے، نملی میرا کے علاقہ میرا کلاں میں بنیامین اور اس کا بھائی محکمہ اطلاعات میں کلاس فور ملازم بتایا جاتا ہے، نے محکمہ جنگلات کی ملکیتی اراضی پر قبضہ کرتے ہوئے وہاں سے بغیر اجازت سڑک نکالنے کیلئے بلڈوزر لگا دیا۔

محکمہ جنگلات کے فارسٹ گارڈ اسد بشیر ان کے سامنے کھڑا ہو گیا اور ان کو غیرقانونی طریقہ سے سڑک نکالنے سے منع کیا جس پر پولیس کانسٹیبل بنیامین اور اس کا بھائی فارسٹ گارڈ اسد بشیر کو اغواء کر کے لے گئے اور کئی گھنٹے تک اسے حبس بے جا میں رکھنے کے دوران شدید تشدد کا نشانہ بنایا۔ پولیس کو اطلاع دی گئی۔ تھانہ بگنوتر کے اہلکاروں نے کارروائی کرتے ہوئے بنیامین کو بازیاب کراتے ہوئے دونوں ملزمان کی گرفتاریوں کیلئے کارروائی شروع کر دی ہے۔

متعلقہ عنوان :