رمضان المبارک کے مہینے میں پانی کی قلت روزہ داروں کے ساتھ ظلم کے مترادف ہے،جان محمد بلوچ

پیر جون 23:23

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 جون2018ء) چیئرمین بلدیہ ملیر جان محمد بلوچ نے وائس چیئرمین بلدیہ ملیر عبدالخالق مروت کے ہمراہ ماہ رمضان المبارک میں بلدیہ ملیرکی یوسیز میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے بڑھتے ہوئے مسائل کے حوالے سے واٹر بورڈ کے افسران سے میٹنگ کی صدارت کی،میٹنگ میں میونسپل کمشنر عمران اسلم ، یوسی وائس چیئرمین معین آباد لالہ وحید الزمان،یوسی وائس چیئرمین مسلم آباد فیصل بخاری، سپرنٹنڈنٹ انجینئر ملیر واٹر بورڈ عبدالرحمان شیخ، ایکس ای این لانڈھی واٹر بورڈ سلیم شریک تھے۔

(جاری ہے)

چیئرمین بلدیہ ملیر جان محمد بلوچ اور وائس چیئرمین بلدیہ ملیر عبدالخالق مروت نے کہا ہے کہ رمضان المبارک کے مہینے میں پانی کی قلت روزہ داروں کے ساتھ ظلم کے مترادف ہے، اس مقدس مہینے میں عوام کو پینے کے پانی کی فراہمی یقینی بنانا ادارہ فراہمی و نکاسی آب کی منصبی ذمہ داری ہے، بلدیہ ملیرمضافاتی علاقے پر مشتمل ہے یہاں بسنے والی عوام زیادہ تر غریب اور متوسط طبقے سے تعلق رکھتی ہے ، ادارہ فراہمی آب تمام وسائل بروے کار لاتے ہوئے پانی کی فراہمی کو یقینی بنائے،مفاد عامہ کیلئے بلدیہ ملیر انتظامیہ محکمہ واٹر بورڈ کو ہر قسم کا تعاون فراہم کرنے کیلئے تیار ہے ،میٹنگ میں موجود اراکین کونسل بلدیہ ملیر نے واٹر بورڈ کے افسران سے مطالبہ کیا کہ واٹر ہائیڈرنٹ بند کئے جائیں تاکہ عوام کو گھر میں پانی کی فراہمی ممکن بنائی جاسکے، چیئرمین وا ئس چیئرمین بلدیہ ملیر کو واٹر بورڈ کے افسران نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پمپری پپنگ اسٹیشن پر بجلی کی غیر اعلانیہ بندش کی وجہ سے پانی کی فراہمی متاثر ہوتی ہے ، واٹر کمیشن کے علم میں ہے کہ کراچی میں چھ واٹر ہائیڈرنٹ قانونی فعال ہیں ، انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ دنوں یوسی کے منتخب بلدیاتی نمائندوں اور واٹر بورڈ کے متعلقہ افسران کی میٹنگ میں فیصلہ ہوا ہے کہ بلدیہ ملیر کی یونین کمیٹیوں میں دس گھنٹے پانی کی سپلائی ہر دوسرے روز عمل میں لائی جائے گی ،پچھلے دس روز کے دوران پانی کا لیول 40فیصد ہے، ہایڈرنٹ کھولنے اور بند کرنے کا اختیار ایم ڈی واٹر بورڈ کو حاصل ہے ۔