ریحام خان کو عمران خان کی زندگی میں پلانٹ کیا گیا تھا، ان کا تعلق بیرونی خفیہ ایجنسیوں سے ہے

سابق آئی ایس آئی سربراہ جنرل حمید گل ریحام خان کو دیکھ کر چونک اٹھے تھے، انہوں نے ریحام کے سامنے بتا دیا تھا کہ اس کا تعلق کس کس شخص اور کس خفیہ ایجنسی سے ہے: حسن نثار کا دعوی

muhammad ali محمد علی پیر جون 23:33

ریحام خان کو عمران خان کی زندگی میں پلانٹ کیا گیا تھا، ان کا تعلق بیرونی ..
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 04 جون 2018ء) حسن نثار کا دعوی ہے کہ سابق آئی ایس آئی سربراہ مرحوم حمید گل نے انکشاف کیا تھا کہ ریحام خان کو عمران خان کی زندگی میں پلانٹ کیا گیا تھا، ان کا تعلق بیرونی خفیہ ایجنسیوں سے ہے۔ تفصیلات کے مطابق ریحام خان کی جانب سے تحریک انصاف کے سربراہ اور اپنے سابقہ شوہر عمران خان اور دیگر افراد پر اپنی کتاب میں مبینہ طور لگائے گئے الزامات کے حوالے سے معروف صحافی اور تجزیہ کار حسن نثار نے ردعمل دیا ہے۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے حسن نثار کا کہنا تھا کہ سابق آئی ایس آئی سربراہ جنرل حمید گل ریحام خان کو دیکھ کر چونک اٹھے تھے۔ حمید گل نے ریحام کے سامنے بتا دیا تھا کہ اس کا تعلق کس کس شخص اور کس خفیہ ایجنسی سے ہے۔

(جاری ہے)

حمید گل نے ریحام خان کے سامنے کہا تھا کہ اسے عمران خان کی زندگی میں پلانٹ کیا گیا ہے اور وہ بیرونی خفیہ ایجنسیوں کی ایجنٹ ہے۔

حسن نثار کا مزید دعوی ہے کہ یہ سب باتیں حمید گل کے صاحبزادے کی جانب سے لکھی گئی کتاب میں بتائی گئی ہیں۔ حسن نثار بتاتے ہیں کہ حمید گل سے ملاقات کے بعد ریحام خان شدید بوکھلاہٹ کے عالم میں وہاں سے واپس گئی تھیں۔ واضح رہے کہ پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کی دوسری سابقہ اہلیہ ریحام خان کی کتاب نے سوشل میڈیا پر ایک طوفان برپا کر دیا ہے۔

سوشل میڈیا پر ریحام خان کی کتاب سے متعلق کئی انکشافات ہوئے جنہوں نے نئی بحث چھیڑ دی ۔ تاہم اب ریحام خان کی اس کتاب نے شائع ہونے سے قبل ہی ایک نیا پنڈوراباکس کھول دیا ہے۔ ریحام خان نے اپنی کتاب میں عمران خان کے قریبی ساتھیوں زلفی بخاری ، وسیم اکرم اور انیلہ خواجہ پر جنسی نوعیت کے الزامات عائد کیے ہیں۔ اپنی کتاب میں ریحام خان نے اپنے سابق شوہر اعجاز رحمان پر بھی الزامات عائد کیے۔

ان چاروں افراد کی جانب سے ریحام خان کو قانونی نوٹس بھجوا دیا گیاہے۔ نوٹس میں ریحام خان سے 14 جون تک جواب طلب کیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق نوٹس میں کہا گیا کہ ریحام خان نے اپنی کتاب میں پہلی شادی کا ذمہ دار اعجاز رحمان کو قراردیا۔ صفحہ 243،417 اور 458 پر انیلہ خواجہ پر عمران خان کے ساتھ تعلقات کا الزام عائد کیاگیا ہے۔ کتاب میں انیلہ خواجہ کو چیف آف حرم قرار دیا گیا۔

صفحہ 402 اور 572 پر وسیم اکرم کی مرحومہ بیوی سے متعلق نہایت گھناؤنے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔ قانونی نوٹس میں مزید کہا گیا کہ ریحام خان نے اپنی کتاب میں زلفی بخاری پر لندن میں ایک خاتون کا اسقاط حمل کروانے کا الزام عائد کیا۔ ریحام خان کی کتاب نے نیا پنڈوراباکس کھولا تو سب ہکا بکا رہ گئے ۔ ریحام خان کی کتاب میں عائد کیے گئے الزامات پر بات کرتے ہوئے معروف صحافی مبشر لقمان نے کہا کہ وسیم اکرم ، اعجاز رحمان اور انیلہ خواجہ کو تو میں ذاتی طور پر جانتا ہوں ، زلفی بخاری کو میں ذاتی حیثیت میں نہیں جانتا البتہ میں ان سے متعلق جانتا ہوں ،اور یہ کہہ سکتا ہوں کہ سب لوگ باعزت ہیں۔

وسیم اکرم کی مرحومہ اہلیہ پر ریحام خان نے الزامات عائد کیے جو افسوسناک ہے۔ وسیم اکرم نے اور ان کے بچوں نے اپنی والدہ کی ایک سنجیدہ اور دکھ بھری موت دیکھی ہے ، ان کا پہلے یہاں علاج ہوا جس کے بعد انہیں سنگاپور جاتے ہوئے بھارت اتارنا پڑا، لیکن ریحام خان کو کوئی لحاظ نہیں ہے۔ انیلہ خواجہ کو میں نے خود دیکھا ہے میں ان کو جانتا ہوں اور میں نے دھرنے کے دنوں میں ان سے بہت رابطہ ہوا۔

وہ دھرنے میں انٹرنیشنل میڈیا کو دیکھ رہی تھیں، میں ان کی بہت عزت کرتا ہوں، رہی بات ڈاکٹر اعجاز رحمان کی تو میں ان کا انٹرویو کر چکا ہوں ، ان سے ملاقات بھی کی ہے وہ بھی نہایت اچھے، منکسر المزاج اور دھیمے انسان ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ گھریلو نوعیت کے مرد ہیںمبشر لقمان نے مزید کہا کہ اب ریحام خان بالکل پاگل ہو گئی ہے اور اسی لیے اس طرح کے الزامات عائد کر رہی ہے ۔