جاپان، ویتنامی لڑکی کے قتل کے ملزم کا صحت جرم سے انکار

منگل جون 11:00

ٹوکیو ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) جاپان کے علاقے چیبا کی ضلعی عدالت میں 9 سالہ ویتنامی لڑکی کے قاتل نے صحت جرم سے انکار کردیا ۔ جاپان کے ذرائع ابلاغ کے مطابق ملزم پر چیبا کی ضلعی عدالت میں مقدمہ چلایا جا رہا ہے۔ ملزم نے اپنے خلاف تمام الزامات سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ استغاثہ نے جھوٹے الزامات عائد کیے ہیں۔ ملزم شبویا کے وکیل نے بھی اسے بے گناہ قرار دیا۔

(جاری ہے)

توقع ہے کہ وکلائے استغاثہ ملزم پر جرح اور مقتولہ کے رشتہ داروں کی گواہیوں کے بعد 18 جون کو ملزم کے لیے سزا کا مطالبہ کریں گے۔ 47 سالہ ملزم یاسٴْوماسا شِبٴْویا کو ویتنامی لڑکی لے تی نیات لِن کے قتل کے شبے میں گزشتہ سال گرفتار کیا گیا تھا۔ مذکورہ لڑکی ٹوکیو کے قریب ماتسٴْودو شہر میں سکول جاتے ہوئے لا پتہ ہو گئی تھی۔شبویا پر الزام ہے کہ اٴْس نے لڑکی کو اغوا کرکے اس کا گلا گھونٹ دیا تھا، اور اس کے بعد اس کی لاش ایک نالے کے قریب پھینک دی تھی۔ وہ اٴْس پرائمری سکول کے بچوں کے والدین کی تنظیم کا سربراہ تھا، جس میں ویتنامی لڑکی بھی پڑھتی تھی۔

متعلقہ عنوان :