میٹرک امتحان میں ناکامی کا خوف،

مصری طالبہ نے اپنی جان لے لی کثیرالمنزلہ عمارت کی پانچویں منزل سے کود کرخودکشی،دوگھنٹے بعد امتحانات شروع ہونا تھے،حکام

منگل جون 13:22

قاہرہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) مصرمیں ایک لڑکی نے میٹرک کے امتحان کی تیاری نہ ہونے اور ناکامی کے خوف سے ایک اونچی عمارت سے کود کر خود کشی کرلی۔عرب ٹی وی کے مطابق اسکندریہ شہر کے ڈائریکٹر سیکیورٹی میجر جنرل محمد الشریف نے بتایا کہ انہیں یہ اطلاع ملی ہے کہ ایک میٹرک کی طالبہ نے کثیرالمنزلہ عمارت کی پانچویں منزل سے کود کر اپنی جان لے لی۔

جس عمارت میں لڑکی نے خود کشی اسی میں امتحانی مرکز قائم کیا گیا تھا اور اس کی خود کشی سے دو گھنٹے کے بعد امتحانات شروع ہونا تھے۔۔خود کشی کرنے والی لڑکی کی شناخت یارا یاسر محمد کے نام سے کی گئی ہے اور کہا جا رہا ہے کہ وہ امتحان کی آمد پر تیاری نہ ہونے کے باعث سخت اعصابی اور نفسیاتی دباؤ کا شکار تھی اور اسے اپنی ناکامی کا ڈر تھا۔

(جاری ہے)

اس نے امتحان میں ناکامی کے خوف سے مغربی اسکندریہ میں الھانوفیل کے مقام پر ایک عمارت سے کود کو خود اپنی زندگی ختم کردی۔

بلندی سے گرنے کیباعث اس کا جسم زخموں سے چور ہوگیا۔ اسے شدید زخمی حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی۔لڑکی کی والدہ نے ایک ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس کی بیٹی میٹرک کے امتحان کے لییتیار نہیں تھی اور اس کی موت کی وجہ امتحان میں ناکامی کا خوف تھا۔ پراسیکیوٹر نے لاش قبضے میں لینے کے بعد واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں۔

متعلقہ عنوان :