ایران اعتماد سازی کے لے تعاون جاری رکھے، آئی اے ای اے

منگل جون 15:23

تہران ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) جوہری معاہدے سے امریکا کی دستبرداری کے بعد پہلے باقاعدہ اجلاس میں جوہری توانائی کی بین الاقوامی ایجنسی نے ایرانی حکومت پر زور دیا ہے کہ اعتماد سازی کے لیے تعاون جاری رکھا جائے۔۔جرمن نشریاتی ادارے کے مطابق جوہری توانائی سے متعلق امور پر نگاہ رکھنے والی اقوام متحدہ کی انٹرنیشنل اٹامک انرجی ایجنسی ( آئی اے ای ای) نے ایران پر زور دیا ہے کہ وہ بر وقت اور کارآمد تعاون کا مظاہرہ کرتے ہوئے 2015 ء میں طے شدہ معاہدے کے تحت اپنی جوہری تنصیبات کا معائنہ ممکن بنائے۔

(جاری ہے)

ایجنسی کے ڈائریکٹر جنرل یوکیا امانو نے اس سلسلے میںاپنے بیان میں کہا کہ اس سے قبل ایران نے ان تمام جوہری تنصیبات پر رسائی فراہم کی ہے، جن تک ایجنسی کے معائنہ کار رسائی چاہتے تھے۔ ویانا میں ایک سینئر یورپی سفارتکار نے بتایا کہ ایران سے تعاون کے بارے میں بات کرنے کا ہر گز یہ مطلب نہیں کہ ایران نے معاہدے کی شرائط کی خلاف ورزی کی ہے بلکہ اس کا مطلب یہ ہے کہ ایجنسی کی جانب سے ایران کی تائید کی جا رہی ہے کہ وہ یہ سلسلہ جاری رکھے۔سفارتکار نے کہا کہ ایرانی حکومت معائنہ کاروں کو ان مقامات کا معائنہ کرنے کی دعوت بھی دے سکتی ہے، جن تک انہوں نے اب تک رسائی نہیں مانگی ہے۔