این آراوکیس:سپریم کورٹ کا پرویزمشرف کی عدم پیشی کا نوٹس

پرویزمشرف جس ملک میں ہیں وہاں کے2 اخبارات میں اشتہارات چھپوائیں،چیف جسٹس ثاقب نثار کے ریمارکس

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ منگل جون 17:39

این آراوکیس:سپریم کورٹ کا پرویزمشرف کی عدم پیشی کا نوٹس
اسلام آباد(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔05 جون 2018ء) : سپریم کورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف کی عدم پیشی کا نوٹس لیتے ہوئے حکم دیا ہے کہ پرویز مشرف جس ملک میں ہیں وہاں کے 2 اخبارات میں اشتہارات چھپوائیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں این آراو سے قومی خزانے کو نقصان پہنچانے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔

اس موقع پرعدالت میں پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک پیش ہوئے۔ فاروق ایچ نائیک نے جواب داخل کرانے کیلئے مہلت مانگ لی۔جبکہ سابق اٹارنی جنرل ملک قیوم نے جواب جمع کروا دیا ہے۔تاہم عدالت نے سابق صدر پرویز مشرف کی عدم پیشی پرنوٹس لے لیا۔۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ پرویز مشرف جس ملک میں ہیں وہاں کے 2اخبارات میں اشتہارات چھپوائیں۔

(جاری ہے)

واضح رہے گزشتہ مہینے سپریم کورٹ میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے این آر او قانون سے متعلق دائر کی گئی درخواست پر سماعت کی، دوران سماعت درخواست گزار فیروزگیلانی نے مؤقف اختیار کیا کہ این آر او کی وجہ سے ملک کا اربوں کا نقصان ہوا، این آر او قانون بنانے والوں سے نقصان کی رقم وصول کی جائے، چیف جسٹس نے درخواست گزار سے استفسار کیا کہ آپ نے فریق کس کو بنایا ہی اس پر درخواست گزار نے بتایا کہ میں نے پرویز مشرف،، آصف زرداری،، ملک قیوم اور نیب کو فریق بنایا ہے۔

چیف جسٹس نے پوچھا کہ آپ کا مقدمہ دائر کرنے کا بنیادی حق کیا ہے؟ عدالت این آر او قانون کالعدم قرار دے چکی ہے۔ چیف جسٹس نے درخواست گزار کا مؤقف سننے کے بعد سابق صدور پرویز مشرف،، آصف زرداری سمیت ملک قیوم اور نیب کو نوٹسز جاری کیے تھے۔ عدالت نے فریقین سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت ایک ماہ کے لیے ملتوی کردی۔